2
0
Friday 4 May 2018 23:39

ایم ایم اے نے آئندہ انتخابات میں (ن) لیگ کیساتھ سیٹ ایڈجسٹمنٹ کا اشارہ دیدیا

ایم ایم اے نے آئندہ انتخابات میں (ن) لیگ کیساتھ سیٹ ایڈجسٹمنٹ کا اشارہ دیدیا
اسلام ٹائمز۔ متحدہ مجلس عمل نے آئندہ انتخابات میں مسلم لیگ نون کے ساتھ سیٹ ایڈجسٹمنٹ کا اشارہ دے دیا۔ متحدہ مجلس عمل (ایم ایم اے) میں شامل دینی جماعتوں میں جمعیت علماء اسلام (ف) اور مرکزی جمعیت اہل حدیث پہلے ہی مسلم لیگ (ن) کے حکومتی اتحادی ہیں جبکہ جماعت اسلامی نے بھی خیبر پختونخوا میں تحریک انصاف سے علیحدگی اختیار کر لی ہے، جمعیت علماء پاکستان اور اسلامی تحریک کے پاس کوئی رکن اسمبلی نہیں ہے۔ مرکزی جمعیت اہل حدیث کے سربراہ سینیٹر ساجد میر کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ اگر الیکشن شفاف ہوئے تو مسلم لیگ (ن) دوبارہ اقتدار میں آ سکتی ہے، اس لئے ممکن ہے انتخابات میں (ن) لیگ کے ساتھ سیٹ ایڈجسٹمنٹ کی جا سکے۔ دوسری جانب ایم ایم اے کے مقابل جمعیت علماء اسلام (س) کے سربراہ مولانا سمیع الحق نیا اتحاد بنانے کے لئے سرگرم ہیں، جس میں جمعیت علماء پاکستان نورانی، نظام مصطفٰی متحدہ محاذ، اہل سنت والجماعت اور ملی مسلم لیگ کو شامل کیا جائے گا، جبکہ اس اتحاد کا جھکاؤ آئندہ انتخابات میں تحریک انصاف کی جانب ہونے کا امکان ہے۔ ذرائع کے مطابق اس اتحاد میں عوامی تحریک، تحریک لبیک پاکستان اور سنی تحریک کو بھی شامل کئے جانے کی کوششیں کی جا رہی ہیں۔
خبر کا کوڈ : 722421
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

Romania
جی ہمیں معلوم تھا چونکہ ایم ایم اے نون لیگ ہی کی بی ٹیم ہے۔
تم بهی کیا دوسرے الزام خان ہو، تمہیں کہاں سے معلوم تھا؟!!!