اسلام ٹائمز 21 Jun 2021 گھنٹہ 12:22 https://www.islamtimes.org/ur/news/939265/آیت-اللہ-ابراہیم-رئیسی-کا-انتخاب-خطے-میں-استحکام-اور-امت-مسلمہ-کے-درمیان-اتحاد-باعث-بنے-گا-علامہ-عارف-واحدی -------------------------------------------------- نئے صدر کی کامیابی سے پاکستان اور ایران کے درمیان برادرانہ تعلقات کو مزید فروغ حاصل ہوگا ٹائٹل : آیت اللہ ابراہیم رئیسی کا انتخاب خطے میں استحکام اور امت مسلمہ کے درمیان اتحاد کا باعث بنے گا، علامہ عارف واحدی -------------------------------------------------- اپنے تہنیتی پیغام میں ایس یو سی پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل کا کہنا تھا کہ ہم امید کرتے ہیں کہ آیت اللہ سید ابراہیم رئیسی عالمی سطح پر اور خطے میں مسلم امہ کیخلاف ہونیوالی سازشوں کے مقابلے میں مسلمان ممالک کو متحد کرنے میں بھرپور کردار ادا کرنے کیساتھ ساتھ ایرانی عوام کی اقتصادی و معاشی مشکلات کے حل کیلئے بھی اپنی تمام کوششیں بروئے کار لائیں گے۔ متن : اسلام ٹائمز۔ شیعہ علماء کونسل پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ عارف حسین واحدی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ حرم امام رضا علیہ السلام کے سابق متولی، ایرانی چیف جسٹس اور نامور انقلابی راہنماء آیت اللہ ڈاکٹر سید ابراہیم رئیسی کی صدارتی انتخابات میں بھاری اکثریت سے کامیابی پر رہبر معظم انقلاب اور ایرانی عوام کو دل کی اتھاہ گہرائیوں سے مبارکباد پیش کرتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ اس وقت استکبار جہانی کی امت مسلمہ پہ یلغار، امریکہ، اسرائیل اور انڈیا کا مسلم امہ خصوصاً فلسطین و کشمیر کے مسلماںوں کے خلاف گٹھ جوڑ اور خطے میں مسلمانوں کو تقسیم کرنے کی سازشوں جیسے گھمبیر معاملات میں نئے ایرانی صدر، رہبر معظم انقلاب آیت اللہ سید علی خامنہ ای حفظہ اللہ کے بہترین حامی و مددگار ثابت ہونگے۔ اپنے تہنیتی پیغام میں علامہ عارف حسین واحدی کا کہنا تھا کہ ہم امید کرتے ہیں کہ آیت اللہ سید ابراہیم رئیسی عالمی سطح پر اور خطے میں مسلم امہ کے خلاف ہونے والی سازشوں کے مقابلے میں مسلمان ممالک کو متحد کرنے میں بھرپور کردار ادا کرنے کے ساتھ ساتھ ایرانی عوام کی اقتصادی و معاشی مشکلات کے حل کے لئے بھی اپنی تمام کوششیں بروئے کار لائیں گے۔ آخر میں علامہ عارف واحدی کا کہنا تھا کہ آقائے رئیسی کے دور صدارت میں دونوں ہمسایہ ممالک پاکستان و ایران کے درمیان برادرانہ اور دوستانہ تعلقات کے ایک نئے دور کا آغاز ہوگا۔ عوام کے درمیان پہلے سے موجود گہرے دینی و ثقافتی رشتوں کو مزید تقویت ملے گی اور اسلامی ممالک میں یہ دونوں انتہائی اہم اور مضبوط ملک خطے میں استحکام اور عوام کی خوشحالی کا باعث بنیں گے۔