اسلام ٹائمز 2 May 2021 گھنٹہ 18:36 https://www.islamtimes.org/ur/news/930357/این-اے-249-میں-دوبارہ-پولنگ-ہوئی-ن-لیگ-10-ہزار-ووٹوں-سے-ہارے-گی-سعیدغنی -------------------------------------------------- ٹائٹل : این اے 249 میں دوبارہ پولنگ ہوئی تو ن لیگ 10 ہزار ووٹوں سے ہارے گی، سعیدغنی -------------------------------------------------- پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیر تعلیم سندھ نے کہا کہ اگر سلیکٹرز کے بغیر جیت ممکن نہیں تو (ن) لیگ کی تین جگہوں سے کامیابی پر بھی سوالات اٹھتے ہیں، جہاں سے (ن) لیگ جیت جائے تو ٹھیک، پیپلز پارٹی جیت جائے تو کہتے ہیں ڈیل ہوئی۔ متن : اسلام ٹائمز۔ سندھ کے وزیر تعلیم سعید غنی کا کہنا ہے کہ این اے 249 کراچی کے ضمنی الیکشن میں ہمارا ٹارگٹ 25 سے 30 ہزار ووٹوں کا تھا، لیکن کم ٹرن آؤٹ کی وجہ سے کم ووٹ ملے، اور اگر حلقے میں دوبارہ پولنگ ہوئی تو (ن) لیگ 500 ووٹوں سے نہیں 5 سے 10 ہزار ووٹوں سے ہارے گی۔ کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیر تعلیم سندھ سعید غنی کا کہنا تھا کہ (ن) لیگ کی قیادت این اے 249 کراچی کے ضمنی الیکشن کے حوالے سے جو الزامات لگا رہی ہے وہ بے بنیاد ہیں، ہم پر دھاندلی کا الزام لگانا مضحکہ خیر ہے، کیونکہ پیپلز پارٹی ہمیشہ دھاندلی کے خلاف گواہ اور الزام لگانے والے بینیفشری رہے، 1988ء سے لے کر 2018ء تک دیکھا جائے تو ہر بار دھاندلی ہمارے ساتھ ہوئی، ہر دور میں ریلیف لینے والے ہمیں طعنے نہ دیں۔ سعید غنی کا کہنا تھا کہ این اے 249 میں ووٹنگ سے لے کر گنتی کے مرحلے تک کسی نے نہیں کہا کہ دھاندلی ہوئی ہے، جب تک ٹی وی پر نتیجہ آ رہا تھا، جس میں لیگی امیدوار مفتاح اسماعیل مبینہ طور پر آگے تھے، تو کسی کو شکایت نہیں تھی۔ سعید غنی نے کہا کہ (ن) لیگ کی حد سے زیادہ خوداعتمادی ان کی شکست کا باعث بنی، ان کی تیاری نہیں تھی صرف خوش فہمی کا شکار تھے، رات 9 بجے کس بنیاد پر جشن منایا گیا اور کس نے (ن) لیگ والوں کو رزلٹ دیا تھا؟ میں الیکشن کے طریقے سے واقف ہے، اس لئے رزلٹ اکٹھے کر رہا تھا، ٹویٹر پر میں نے جو نتائج شیئر کیے وہ فارم 45 کے مطابق تھے، نتائج کے دوران ٹی ایل پی ضرور ہم سے آگے نکلی، لیکن (ن) لیگ کہیں آگے نہیں نکلی۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ انتخابات پر اعتراضات شواہد کی بنیاد پر ہوتے ہیں، وزیراعظم نے تمام اداروں سے رپورٹ لی ہے، پیپلز پارٹی کیسے جیتی؟ تمام اداروں نے جواب دیا پیپلز پارٹی آپ کی نالائقی کی وجہ سے جیتی ہے، شاہد خاقان عباسی کسی ایک پولنگ اسٹیشن کا بتائیں جہاں دھاندلی ہوئی ہے، (ن) لیگ نے ضمنی انتخابات کی تیاری نہیں کی تھی، جبکہ ہماری بھرپور تیاری تھی، 10 دن پہلے کہا تھا کہ ہم این اے 249 کراچی کے ضمنی انتخابات جیتیں گے، ہم نے مختلف پارٹیوں سے لوگوں کو اپنی پارٹی میں شامل کیا، ہمارا ٹارگٹ 25 سے 30 ہزار ووٹوں کا تھا، کم ٹرن آوَٹ کی وجہ سے کم ووٹ ملے، لیکن اگر حلقے میں ری پولنگ ہوئی تو (ن) لیگ 500 ووٹوں سے نہیں 5 سے 10 ہزار ووٹوں سے ہارے گی۔ سعید غنی کا کہنا تھا کہ شاہد خاقان عباسی نے کہا پیپلز پارٹی کی جیت میں سلیکٹرز کا کردار ہے، اگر سلیکٹرز کے بغیر جیت ممکن نہیں تو (ن) لیگ کی تین جگہوں سے کامیابی پر بھی سوالات اٹھتے ہیں، جہاں سے (ن) لیگ جیت جائے تو ٹھیک، پیپلز پارٹی جیت جائے تو کہتے ہیں ڈیل ہوئی، شہباز شریف، حمزہ اور سعد رفیق کی ضمانت ہو جائے تو ٹھیک ہے، لیکن اگر آصف زرداری کی ضمانت ہو تو ڈیل کا طعنہ دیا جاتا ہے، اگر آصف زرداری کی ضمانت ڈیل کا نتیجہ ہے، تو پھر شہباز شریف اور دیگر کی ضمانت بھی ڈیل کا نتیجہ ہے، آصف زرداری اور فریال تالپور کا ٹرائل سندھ میں کرنے کا مطالبہ کریں تو کہتے ہیں ڈیل ہو رہی ہے، عمران خان کو ہٹانا اور بزدار کو گرانا آپ نہیں چاہتے، ڈیل ہماری ہے؟ یہ دہرے معیار نہیں چل سکتے، بلاول بھٹو کا سیاسی قد ملک کے دیگر سیاستدانوں سے بڑا ہے، ریلیف لینے والے ہم پر الزام نہ لگائیں۔