2
Sunday 29 Sep 2019 18:17

لاہور، لاپتہ افراد کی بازیابی کیلئے ریلی

  • لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

    لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

  • لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

    لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

  • لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

    لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

  • لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

    لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

  • لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

    لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

  • لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

    لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

  • لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

    لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

  • لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

    لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

  • لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

    لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

  • لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

    لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

  • لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

    لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

  • لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

    لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

  • لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

    لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

  • لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

    لاہور میں لاپتہ شیعہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

اسلام ٹائمز۔ دو ماہ سے لاپتہ ایڈووکیٹ یافث نوید ہاشمی کی بازیابی کیلئے لاہور پریس کلب تا گورنر ہاؤس تک سول سوسائٹی کنیزان زینب اور لاپتہ افراد کے اہلخانہ کی جانب سے احتجاجی ریلی نکالی گئی۔ احتجاجی ریلی میں بچوں اور خواتین کی کثیر تعداد نے بھی شرکت کی، جبکہ مظاہرین نے منہ اور آنکھوں پر سیاہ پٹیاں اور ہاتھوں پر علامتی ہتھکڑیاں پہن کر جبری گمشدگیوں کیخلاف مظاہرہ کیا۔ اس موقع پر ایڈووکیٹ شکیل نقوی کا کہنا تھا پاکستان میں جبری گمشدگی ایک سنگین مسئلہ بن چکا ہے، ہم ایسے ملک کے باشندے ہیں جہاں ادارے بھی ہیں اور قانون بھی لیکن بدقسمتی سے جبری گمشدگیوں کا سلسلہ تھم نہیں رہا۔
خبر کا کوڈ : 819056
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے