0
Thursday 26 Nov 2020 23:04

شمالی وزیرستان، جائے وقوعہ سانحہ میر علی

  • شمالی وزیرستان، دہشتگردانہ حملے میں نیسپاک کے 4 اہلکار شہید

    شمالی وزیرستان، دہشتگردانہ حملے میں نیسپاک کے 4 اہلکار شہید

  • شمالی وزیرستان، دہشتگردانہ حملے میں نیسپاک کے 4 اہلکار شہید

    شمالی وزیرستان، دہشتگردانہ حملے میں نیسپاک کے 4 اہلکار شہید

  • شمالی وزیرستان، دہشتگردانہ حملے میں نیسپاک کے 4 اہلکار شہید

    شمالی وزیرستان، دہشتگردانہ حملے میں نیسپاک کے 4 اہلکار شہید

  • شمالی وزیرستان، دہشتگردانہ حملے میں نیسپاک کے 4 اہلکار شہید

    شمالی وزیرستان، دہشتگردانہ حملے میں نیسپاک کے 4 اہلکار شہید

  • شمالی وزیرستان، دہشتگردانہ حملے میں نیسپاک کے 4 اہلکار شہید

    شمالی وزیرستان، دہشتگردانہ حملے میں نیسپاک کے 4 اہلکار شہید

  • شمالی وزیرستان، دہشتگردانہ حملے میں نیسپاک کے 4 اہلکار شہید

    شمالی وزیرستان، دہشتگردانہ حملے میں نیسپاک کے 4 اہلکار شہید

  • شمالی وزیرستان، دہشتگردانہ حملے میں نیسپاک کے 4 اہلکار شہید

    شمالی وزیرستان، دہشتگردانہ حملے میں نیسپاک کے 4 اہلکار شہید

  • شمالی وزیرستان، دہشتگردانہ حملے میں نیسپاک کے 4 اہلکار شہید

    شمالی وزیرستان، دہشتگردانہ حملے میں نیسپاک کے 4 اہلکار شہید

  • شمالی وزیرستان، دہشتگردانہ حملے میں نیسپاک کے 4 اہلکار شہید

    شمالی وزیرستان، دہشتگردانہ حملے میں نیسپاک کے 4 اہلکار شہید

  • شمالی وزیرستان، دہشتگردانہ حملے میں نیسپاک کے 4 اہلکار شہید

    شمالی وزیرستان، دہشتگردانہ حملے میں نیسپاک کے 4 اہلکار شہید

اسلام ٹائمز۔ شمالی وزیرستان میں دہشتگردوں کی فائرنگ سے نیسپاک کے چار اہلکار شہید ہوگئے ہیں، شہداء میں ڈیرہ اسماعیل خان سے تعلق رکھنے والے امامبارگاہ تھلہ فضل شاہ کے متولی سید ظفر عباس شاہ بھی شامل ہیں۔ چاروں اہلکار ادارے کی گاڑی میں ہی سوار تھے اور پیشہ وارانہ خدمات کے سلسلے میں شمالی وزیرستان میں موجود تھے۔ سانحہ شمالی وزیرستان کی تحصیل میر علی میں پیش آیا۔ چاروں افراد مختلف شہروں سے تعلق تھے اور ایف ڈبلیو او کے شعبہ انجنیئرنگ سروس میں خدمات سرانجام دیتے تھے۔ ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر شمالی وزیرستان شفیع اللہ گنڈہ پور کی جانب سے فراہم کردہ تفصیلات کے مطابق چاروں افراد میں سے ایک شہید سید ظفر عباس شاہ کا تعلق ڈیرہ اسماعیل خان سے ہے اور وہ امامبارگاہ تھلہ فضل شاہ کے متولی ہیں۔

باقی مقتولین کا تعلق میر علی، ایبٹ آباد اور گوجرانولہ سے ہے۔ ڈی پی او شفیع اللہ گنڈہ پور کے مطابق واقعہ کی تحقیقات شروع کر دی گئی ہیں اور حملہ آوروں کی تلاش و گرفتاری کے لئے سرچ آپریشن بھی شروع کر دیا گیا ہے۔ مقتولین کی لاشیں میر علی ہسپتال میں پوسٹ مارٹم کی غرض سے منتقل کر دی گئی ہیں جبکہ پولیس کی مختلف ٹیمیں وقوعہ کا مختلف پہلوؤں سے جائزہ لیکر باریک بینی سے تحقیقات کر رہی ہیں۔
خبر کا کوڈ : 900174
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

ہماری پیشکش