0
Saturday 6 Aug 2022 23:04

رسول اکرمؐ 61 ہجری میں کربلا میں ہوتے تو امام حسینؑ جیسا اقدام اٹھاتے، علامہ شہنشاہ نقوی

رسول اکرمؐ 61 ہجری میں کربلا میں ہوتے تو امام حسینؑ جیسا اقدام اٹھاتے، علامہ شہنشاہ نقوی
اسلام ٹائمز۔ پاک محرم ایسوسی ایشن کے زیرِ اہتمام نشتر پارک میں مرکزی عشرہ محرم الحرام کی ساتویں مجلس عزا سے علامہ شہنشاہ حسین نقوی نے عقیدہ امامت کے موضوع پر خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ امامت ادارہ ہدایت و رہنمائی ہے، جو اقدام امام حسین علیہ السلام نے اٹھایا، اگر رسول اکرم سن 61 ہجری میں ہوتے, تو آپ بھی یہی اقدام اٹھاتے، کیونکہ امام حسینؑ رسول اکرمؐ کے تربیت یافتہ تھے۔ انہوں نے کہا کہ یہ ایام عزا تاریخ یاد دلانے کے ایام ہیں، ہمارا عقیدہ ہے کہ تمام تر کمالات کا مجموعہ رسول اکرمؐ ہیں اور امام علیؑ سے امام زمانؑ تک تمام آئمہ اہلبیتؑ رسول اکرمؐ کی تعلیمات کی تصویر ہیں اور حضورِؐ سرور کائنات کے معجزات میں سے ایک معجزہ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ امام حسینؑ کی یاد اہتمام پروردگار ہے، ہم عزائے حسین کے نوکر ہیں اور نوکروں کو اپنی اوقات میں رہنا چاہیے، مالک کے مہمانوں کا خیال کرنا چاہیے، کیونکہ یہ مجالس و عزاداری انسان سازی کے کارخانے ہیں اور یہی مشیت الہٰی ہے اور آل محمد (ص) کے کمالات میں ایک کمال ہے کہ یہ گھرانہ انسان ساز گھرانہ ہے۔
خبر کا کوڈ : 1007968
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش