0
Friday 19 Aug 2022 23:28

خیبر پختونخوا میں اسکولز کھل گئے، سرکاری درسی کُتب نہ مل سکیں

خیبر پختونخوا میں اسکولز کھل گئے، سرکاری درسی کُتب نہ مل سکیں
اسلام ٹائمز۔ پشاور میں اسکولز کھل گئے ہیں تاہم کئی اسکولز کو سرکاری درسی کُتب نہ مل سکیں۔ مڈل، ہائی اور ہائیر سیکنڈری اسکولوں میں اب بھی 4 لاکھ سے زیادہ کتابوں کی کمی ہے، ٹیکسٹ بک بورڈ کے مطابق صوبے بھر میں ساڑھے چار کروڑ کتابوں کی سرکاری ڈیمانڈ تھی جن میں سے تین کروڑ 65 لاکھ کتابیں فراہم کی جا چکی ہیں۔ خیبر پختونخوا میں سرکاری اسکولز تو کھل گئے تاہم حکومت اب تک تمام بچوں کو مفت سرکاری کتب فراہم نہیں کرسکی۔ پشاور کے مڈل، ہائی اور ہائیر سیکنڈری اسکولز کو 4 لاکھ سے زیادہ کتابیں مہیا نہیں کی گئی ہیں۔

شہر کے مختلف تعلیمی اداروں میں مڈل اور میٹرک کے طلبہ کو ریاضی، سائنس، پشتو، ہسٹری ،اردو جبکہ ہائیر سیکنڈری کے طلبہ کو فزکس، میتھس،کیمسٹری اور ریاضی کی کتابیں فراہم نہیں کی گئیں۔ دوسری جانب خیبر پختونخوا ٹیکسٹ بک بورڈ کے چیئرمین ارشد آفریدی نے بتایا کہ صوبے میں 80 فیصد طلبہ کو مفت درسی کتب فراہم کردی گئی ہیں،  ساتویں اور آٹھویں جماعت کی کتابوں کی چھپائی جاری ہے، 27 اگست تک صوبے بھر کے طلبہ کو کتابیں دے دی جائیں گی۔
خبر کا کوڈ : 1010037
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش