0
Saturday 24 Sep 2022 19:46

بھارت میں کوئی ہٹلر نہیں ہو سکتا، موہن بھاگوت

بھارت میں کوئی ہٹلر نہیں ہو سکتا، موہن بھاگوت
اسلام ٹائمز۔ مسجد و مدرسہ کے دورے سے ٹھہرے ہوئے پانی میں ہلچل پیدا کرنے کے بعد آر ایس ایس کے سربراہ موہن بھاگوت کا ایک اور ہلچل مچانے والا بیان سامنے آیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستانی قومیت کا تصور ایک خاندان کے تصور کو آگے بڑھاتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس سے کسی ملک کو کوئی خطرہ نہیں، اس لئے ہندوستان میں کوئی ہٹلر نہیں ہو سکتا۔ راشٹریہ سویم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) کے سربراہ یہاں سنکلپ فاؤنڈیشن اور سابق بیوروکریٹس کے ایک گروپ کے زیر اہتمام ایک تقریب سے خطاب کر رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ ہماری قوم پرستی سے دوسروں کو کوئی خطرہ نہیں اور یہ ہماری فطرت نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہماری قوم پرستی بتاتی ہے کہ دنیا ایک خاندان ہے اور دنیا بھر کے لوگوں میں اس احساس کو بڑھاتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس لئے ہندوستان میں ہٹلر نہیں ہو سکتا، اگر کوئی ہے تو ملک کے عوام اسے ہٹا دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہر کوئی عالمی منڈی کے بارے میں بات کرتا ہے، لیکن صرف ہندوستان ہی اتحاد و سب کو ساتھ لیکر چلنے کی بات کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم دنیا کو ایک خاندان بنانے کے لئے کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے زور دے کر کہا کہ ہندوستان کا قوم پرستی کا تصور دیگر قوم پرستی کے تصورات سے مختلف ہے، جو مذہب یا زبان یا لوگوں کے مشترکہ مفاد پر مبنی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ تنوع قدیم زمانے سے ہندوستان کے قومیت کے تصور کا ایک حصہ رہا ہے۔ موہن بھاگوت ہمارے لئے مختلف زبانیں اور خدا کی عبادت کے مختلف طریقے ہونا فطری بات ہے۔ یہ زمین نہ صرف خوراک اور پانی مہیا کرتی ہے بلکہ قیمت بھی دیتی ہے۔ اسی لئے ہم اسے بھارت ماتا کہتے ہیں۔ پروگرام کی صدارت کرتے ہوئے ایودھیا رام مندر تعمیراتی کمیٹی کے صدر اور وزیر اعظم کے سابق پرنسپل سکریٹری نریپیندر مشرا نے کہا کہ سنکلپ فاؤنڈیشن ہونہار اور ضرورت مند طلباء کی حوصلہ افزائی کر رہی ہے۔ وہ 36 سال سے ضرورتمندوں کی پڑھائی میں اہم کردار ادا کر رہا ہے۔ فاؤنڈیشن یو پی ایس سی کے امیدواروں کے لئے آر ایس ایس سے تعاون یافتہ ٹریننگ اکیڈمی ہے۔ آر ایس ایس کے جوائنٹ جنرل سکریٹری کرشنا گوپال انسٹی ٹیوٹ کے سرپرستوں میں سے ایک ہیں۔
خبر کا کوڈ : 1015969
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش