0
Monday 26 Sep 2022 23:44

نجی گفتگو کا لیک ہونا غیبت کے زمرے میں آتا ہے، حوصلہ شکنی کی ضرورت ہے، صدر عارف علوی

نجی گفتگو کا لیک ہونا غیبت کے زمرے میں آتا ہے، حوصلہ شکنی کی ضرورت ہے، صدر عارف علوی
اسلام ٹائمز۔ صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ نجی گفتگو کا لیک ہونا غیبت کے زمرے میں آتا ہے، حوصلہ شکنی کی ضرورت ہے۔ گورنر ہاﺅس کراچی میں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو میں صدر عارف علوی نے نجی گفتگو عام کرنے پر اظہار تشویش کرتے ہوئے کہا کہ گفتگو یا تبصرے لیک کرنا، جعلی خبریں پھیلانا غیر اخلاقی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے معاشرے کو غیبت اور جعلی خبروں کا سامنا ہے، کسی واقعہ کو حوالہ اور سیاق و سباق سے ہٹ کر بیان کیا جاتا ہے، ہمیں نظم وضبط کا مظاہرہ کرتے ہوئے کسی کی نجی گفتگو میں دلچسپی نہیں لینی چاہیے۔ صدر عارف علوی نے کہا کہ ٹیکنالوجی کے پھیلاؤ کی وجہ سے معلومات لیک ہونے میں اضافہ ہوا ہے، سوشل میڈیا کو ضروری معلومات اور علم کیلئے استعمال کیا جانا چاہیے۔

صدر عارف علوی نے کہا کہ عوام میں سیاسی حریفوں کے ساتھ مہذب رویہ اپنانے کی ضرورت ہے، سیاستدان قوم کو فکری طور پر مضبوط بنانے کیلئے اپنا کردار ادا کریں۔ انہوں نے کہا کہ فکری قوت ہمارے ملک کو کم سے کم مدت میں مضبوط بنا سکتی ہے۔ صدر مملکت عارف علوی نے کہا کہ دنیا نے سائبر سیکیورٹی میں اہم ایجادات اور پیشرفت کی ہے، یہ کسی بھی قوم کی حفاظت اور سلامتی کیلئے اہم شعبہ بن گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے استحکام و ترقی کیلئے سائبر سیکیورٹی اپنانے کیلئے اقدامات کی ضرورت ہے۔
خبر کا کوڈ : 1016298
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش