0
Wednesday 28 Sep 2022 22:26

اسحاق ڈار پر سنگین الزامات ہیں، پہلے مقدمات کا سامنا کرے، مولانا عبدالحق ہاشمی

اسحاق ڈار پر سنگین الزامات ہیں، پہلے مقدمات کا سامنا کرے، مولانا عبدالحق ہاشمی
اسلام ٹائمز۔ امیر جماعت اسلامی بلوچستان مولانا عبدالحق ہاشمی نے کہا ہے کہ امریکی غلامی سے نجات اور بدعنوانی ختم کئے بغیر ملک میں ترقی و خوشحالی نہیں آسکتی۔ معیشت پر بدعنوان عناصر کا قبضہ ہے۔ جو صرف آئی ایم ایف کے غلام اور بدعنوان ہیں۔ بدقسمتی سے ملک میں قانون و انصاف نام کی کوئی چیز نہیں۔ قانون اگر ہے تو صرف غریبوں پر لاگو ہے۔ سرمایہ داروں بدعنوان سیاستدانوں پر قانون لاگو نہیں۔ ایک دن سب سے بڑا بدعنوان، جبکہ پھر وہی فرد آشیرباد سے ہیرو بنا دیا جاتا ہے۔ اسلامی نظام، قانون کی حکمرانی اور انصاف کا بول بالا ہونا وقت کی اہم ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ بدعنوان سیاستدانوں کا علاج بچوں کی تعلیم و تربیت اور کاروبار باہر ہوتے ہیں، جبکہ حکمرانی و نوکری پاکستان میں کرتے ہیں۔ بیوروکریٹ جو بیرون ملک رہتے ہیں وہ حکومت پاکستان سے تنخواہ، مراعات کیوں وصول کرتے ہیں۔ اسحاق ڈار علاج کی غرض سے ملک سے گئے تھے۔ ان پر سنگین قسم کے مقدمات ہیں۔ ان کو پہلے اپنے اوپر قائم مقدمات کا سامنا کرنا چاہیے۔ اسحاق ڈار کی واپسی اور اہم ترین عہدے پر تعیناتی سے یہ بات واضح ہوگئی ہے کہ پاکستان میں قانون کا اطلاق صرف اور صرف غریبوں پر ہوتا ہے۔ جو جتنا بڑا چور، ڈاکو، لیٹرا اور اثر و رسوخ رکھتا ہے، اس کے لیے قانون اتنا ہی نرم ہے۔ ملک کے آئین اور قانون کی دھجیاں اڑائی جا رہی ہیں۔

اگر قانون کا احترام نہیں ہوگا تو معاشرہ حیوانیت کا شکار ہوجائے گا۔ قانون سب کیلئے یکساں ہونا وقت کی اہم ضرورت ہے۔ انصاف کا بول بالا ہوگا تو ہر فرد کو انصاف ملے گا۔ قوم کو خوشحالی ملے گی اور پریشانی بدعنوانی ختم ہوگی۔ عالمی مارکیٹ میں پٹرول کی قیمت 9 ماہ کی کم ترین سطح پر ہے۔ فی بیرل 80 ڈالر کا ہوچکا ہے۔ مگر بدقسمتی سے پاکستان میں آج بھی پٹرول کی پرانی قیمتیں وصول کی جا رہی ہیں۔ حکومت پٹرول پر فی لیٹر 46 روپے ٹیکس وصول کر رہی ہے۔ لوگوں کا مہنگائی سے کچومر نکل چکا ہے۔ عوام کو ریلیف فراہم کرنے پٹرول کی قیمت میں واضح کمی کی جائے۔ اہل بلوچستان کو ایرانی پٹرول سستے قیمت پر فراہم کیے جائیں۔
خبر کا کوڈ : 1016648
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش