0
Wednesday 23 Nov 2022 19:52

حکومت کا شہریوں کو ایک لاکھ روپے تک کا موبائل فون آسان اقساط پر دینے کا فیصلہ

حکومت کا شہریوں کو ایک لاکھ روپے تک کا موبائل فون آسان اقساط پر دینے کا فیصلہ
اسلام ٹائمز۔ حکومت پاکستان نے اسمارٹ فونز تک ملک کے تمام شہریوں کی رسائی کے لیے نیا پروگرام متعارف کرانے کا اعلان کیا ہے، جس کے تحت شہریوں کو ایک لاکھ روپے تک کے اسمارٹ فونز آسان اقساط پر فراہم کیے جائیں گے۔ اس بات کا اعلان وفاقی وزیر برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی سید امین الحق نے اسلام آباد میں ’اسمارٹ فون فار آل‘ کے عنوان سے ہونے والی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر فاقی وزیر آئی ٹی سید امین الحق کا کہنا تھا کہ ٹک ٹاک کے ساتھ بات چیت مکمل ہوگئی ہے، اور ٹک ٹاک چند ہفتوں میں اسلام آباد میں دفترقائم کرے گا۔ وفاقی وزیر نے بتایا کہ فیس بک بھی پاکستان میں دفتر قائم کرے گا۔ وفاقی وزیر برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی امین الحق نے بتایا کہ اس اسکیم کے تحت 20 سے 30 فیصد ادائیگی پر کوئی بھی موبائل فون حاصل کرسکے گا، اسمارٹ فونز کو اقساط میں لینے کے لیے کسی ضمانت یا کاغذی کارروائی کی ضرورت نہیں ہوگی بلکہ صرف شناختی کارڈ پرموبائل فون کا حصول ممکن ہوگا۔

انہوں نے مزید بتایا کہ اسمارٹ فون فار آل اسکیم کے تحت 10 ہزار سے ایک لاکھ روپے مالیت کے اسمارٹ فونز 3 سے 12 ماہ کی اقساط میں دیے جائیں گے، اگر کسی فرد کی جانب سے اقساط کی ادائیگی نہیں کی گئی تو فون کو لاک کردیا جائے گا جس کے بعد وہ ڈیوائس دنیا میں کہیں بھی استعمال نہیں ہوسکے گا۔ وفاقی وزیر نے مزید کہا کہ اس اسکیم کا مقصد عام آدمی تک اسمارٹ فون پہنچانا اورچھوٹے کاروباری افراد کو ای کامرس کی جانب لانا ہے تاہم انہوں نے پروگرام کے آغاز کی تاریخ پر کوئی بات نہیں کی۔انہوں نے بتایا کہ کنکٹیویٹی سہولیات کے لیے 65 ارب روپے سے 70 سے زائد پروجیکٹس پر کام جاری ہے، ماضی میں پاکستان کی کسی حکومت نے ملک میں موبائل فون بنانے کا نہیں سوچا تھا مگر آج وزارت آئی ٹی کی بدولت پاکستان میں 29 کمپنیاں موبائل فونزبنارہی ہیں۔
خبر کا کوڈ : 1026430
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش