0
Saturday 26 Nov 2022 09:11

بلدیاتی انتخابات بارے جاری ضابطہ اخلاق پر عملدرآمد ہر شخص پر لازم ہے، الیکشن کمیشن

بلدیاتی انتخابات بارے جاری ضابطہ اخلاق پر عملدرآمد ہر شخص پر لازم ہے، الیکشن کمیشن
اسلام ٹائمز۔ آزاد جموں و کشمیر الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری پریس ریلیز میں کہا گیا ہے کہ الیکشن کمیشن کی جانب سے بلدیاتی انتخابات 2022ء کے سلسلہ میں جاری شدہ ضابطہ اخلاق پر عملدرآمد ہر شخص پر لازم ہے لیکن آزاد جموں و کشمیر الیکشن کمیشن کو مسلسل شکایات موصول ہو رہی ہیں کہ بعض امیدواران کے جلسہ جلوس میں وزیراعظم اور وزراء کرام ترقیاتی سکیموں اور رقوم کے اعلانات کر رہے ہیں جو کہ ضابطہ اخلاق کی صریحا خلاف ورزی ہے۔ ضابطہ اخلاق کی نسبت یہ امر واضح رہے کہ ضابطہ اخلاق کی پابندی کی ذمہ داری بنیادی طور پر انتخابات میں حصہ لینے والے امیدار کی ہے اور ہر امیدوار کی ذمہ داری ہے کہ وہ اپنی میٹنگ، جلسہ جلوس میں شریک افراد اور مہمانان کو بھی ضابطہ اخلاق کا پابند بنائے اس طرح اگر معزز وزراء کرام، مشیران کرام یا وزیراعظم کی طرف سے جس امیدوار کی میٹنگ یا جلسہ جلوس میں سرکاری وسائل استعمال کیے جاتے ہیں یا کسی سکیم یا منصوبے کا اعلان کیا جاتا ہے تو وہ امیدوار ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کا مرتکب قرار دیا جائے گا اور ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر اس امیدوار کے خلاف قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی جو کہ اس امیدوار کو جرمانہ کے ساتھ ساتھ اس کی بطور امیدوار نااہلی پر بھی منتج ہو سکتی ہے۔

درج بالا صورتحال کے پیش نظر حسب ہدایت تحریر ہے کہ اگر کسی بھی امیدوار کی میٹنگ میں کسی بھی حکومتی اہلکار یا میٹنگ میں شرکت کسی بھی شخص کی طر ف سے کسی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کی جاتی ہے تو متعلقہ امیدوار کے خلاف ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر نااہلی کی کارروائی رواں کرتے ہوئے کارروائی مطابق ضابطہ عمل میں لائی جائے اور اس کی رپورٹ الیکشن کمیشن کو ارسال کی جائے۔
خبر کا کوڈ : 1026935
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش