0
Sunday 27 Nov 2022 09:48

وزیراعلیٰ پنجاب اسمبلی تحلیل کرنے کیلئے آمادہ

وزیراعلیٰ پنجاب اسمبلی تحلیل کرنے کیلئے آمادہ
اسلام ٹائمز۔ سابق وزیراعظم پاکستان اور تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کے اعلان کے بعد وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویزالہیٰ نے بھی حکم ملتے ہی اسمبلی تحلیل کرنے پر آمادگی ظاہر کر دی ہے۔ ذرائع کے مطابق دونوں اتحادی جماعتوں کی مرکزی قیادت نے اسمبلیاں توڑنے کے اعلان پر گزشتہ رات مشاورت اور آئندہ لائحہ عمل طے کرنے کیلئے سر جوڑ لئے ہیں اور چودھری پرویز الٰہی نے کہا کہ وہ بلا تاخیر فیصلے پر عمل کریں گے۔ پنجاب اسمبلی توڑنے کا حتمی فیصلہ ہونے پر وزیراعلیٰ پنجاب کی ایڈوائس پر پر فوری صوبائی اسمبلی پنجاب تحلیل ہو جائے گی۔
 
اسمبلی اجلاس 27 جولائی سے تاحال جاری ہے اور آئین و قانون کے مطابق جاری اجلاس کے دوران تحریک عدم اعتماد پیش نہیں کی جا سکتی اور اجلاس کا تواتر سے جاری رہنا بھی عدم اعتماد کے خطرے سے بچنے کی حکمت عملی کا حصہ ہے۔ پنجاب اسمبلی میں اِس وقت تحریک انصاف کے 180 اور اتحادی جماعت پاکستان مسلم لیگ کے 10 ارکان کی وجہ سے حکمران اتحاد کے پاس مجموعی طور پر 190 نشستیں ہیں۔ دوسری طرف حزب اختلاف میں مسلم لیگ نون کے 167، پاکستان پیپلز پارٹی کے 7، پاکستان راہ حق پارٹی کا 1 اور ایک آزاد رکن اور پانچ آزاد اراکین اسمبلی کی حمایت کے باوجود 181 اراکین اسمبلی ہیں۔ یوں صوبائی اسمبلی پنجاب توڑنے کی صورت میں سبھی بلاامتیاز گھروں کو چلے جائیں گے۔
خبر کا کوڈ : 1027131
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش