0
Saturday 3 Dec 2022 23:54

جنرل باجوہ کو توسیع دیکر بہت بڑی غلطی کی تھی، عمران خان

جنرل باجوہ کو توسیع دیکر بہت بڑی غلطی کی تھی، عمران خان
اسلام ٹائمز۔ چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے کہا ہے کہ جنرل باجوہ کو توسیع دے کر بہت بڑی غلطی کی تھی، کبھی بھی کسی آرمی چیف کو توسیع نہیں ملنی چاہیئے، انہوں نے نجی ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ ان سے بہت بڑی غلطی ہوئی کہ جنرل باجوہ کو توسیع دی، آئندہ کسی کو بھی کسی آرمی چیف کو توسیع نہیں دینی چاہیئے، میرے دور میں مسائل بہت زیادہ تھے اس لیے توسیع دینا پڑی۔ جنرل باجوہ نے مجھ سے جھوٹ بولا کہ وہ نیوٹرل ہیں، جبکہ وہ میرے اتحادیوں کو سنگل دے رہے تھے کہ آپ پی ڈی ایم کے ساتھ چلے جائیں، جنرل باجوہ نے ہر بار مجھ سے کہا کہ ایسا کچھ نہیں ہے، میں نے جنرل باجوہ پر واضح کر دیا تھا کہ اگر آپ میرے ساتھ نہیں ہیں تو پھر میں اپنی پبلک کے پاس جاوں گا، یہاں تک سمجھایا کہ اکانومی تباہ ہوجائیگی۔

اس سے قبل چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے خیبرپختونخوا کی پارلیمانی پارٹی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پرویزالہٰی نے مجھے پنجاب اسمبلی توڑنے کا اختیار دے دیا ہے، ایم این ایز اور ایم پی ایز کو اب الیکشن کی تیاری کرنی چاہیے، الیکشن چاہے اکتوبر میں ہوں یا اگست میں، پی ٹی آئی جیتے گی۔ انہوں نے بتایا کہ ہم رواں ماہ ہی اسمبلیاں تحلیل کریں گے، جب 66 فیصد آبادی کی نشستیں خالی ہوں تو ملک کو عام انتخابات کی طرف جانا پڑے گا، 66 فیصد کے بجائے ملک بھر میں الیکشن کے خواہاں ہیں۔ عمران خان نے کہا کہ حکمرانوں کی کارکردگی سے لوگ تنگ آگئے ہیں، الیکشن میں تاخیر ہوتی ہے تو اس میں بھی پی ٹی آئی کو فائدہ ہوگا، الیکشن پی ٹی آئی نہیں ملک کی ضرورت ہے، موجودہ صورتحال میں ملک میں سیاسی استحکام کی ضرورت ہے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ ہم نے فیصلہ کرلیا ہے کہ پنجاب اور خیبرپختونخوا اسمبلی تحلیل کرنا ہے، میرے گزشتہ روز کے بیان سے پی ڈی ایم حکومت کو غلط فہمی ہوگئی اور غلط پیغام چلا گیا، ہم نے حکومت کو صرف یہ پیغام دیا تھا کہ 66 فیصد ملک میں الیکشن ہوگا اور سب الیکشن میں چلے جائیں گے تو حکومت کا کام تو ختم ہوجائے گا اور ملک رک جائے گا۔ عمران خان نے بتایا کہ میں نے صرف کہا تھا کہ ملک آپ سے سنبھالا نہیں جارہا ہے، تو 66 فیصد پاکستان کی بجائے آپ پورے ملک میں الیکشن کرا دیں، حکمرانوں سے بات چیت کس بنیاد پر ہوگی، ہوہی نہیں سکتی، میں نے صرف یہ کہا ہے کہ اگر عام انتخابات کی تاریخ دینے پر بات چیت کرنا چاہتے ہیں تو ہم تیار ہیں، لیکن اگر حکومت عام انتخابات نہیں کراتی، تو عنقریب اسمبلیاں تحلیل کر دیں گے۔
خبر کا کوڈ : 1028350
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش