0
Friday 27 Jan 2023 18:45

راہل گاندھی کی ’بھارت جوڑو ریلی‘ بانہال میں روکی گئی

راہل گاندھی کی ’بھارت جوڑو ریلی‘ بانہال میں روکی گئی
اسلام ٹائمز۔ راہل گاندھی کی قیادت میں نکالی جا رہی انڈین نیشنل کانگریس کی ’بھارت جوڑو ریلی‘ آج جموں و کشمیر کے بانہال میں روک دی گئی۔ کانگریس کا الزام ہے کہ ریلی میں سیکورٹی فراہم نہیں کی جا رہی ہے، جس کی وجہ سے سفر روکنا پڑا۔ کانگریس نے کہا کہ جب تک سیکورٹی فراہم نہیں کی جائے گی تب تک ریلی کی پیش قدمی خطرے سے خالی نہیں ہے۔ راہل گاندھی نے کہا کہ ریلی کے دوران پولیس کا نظام پوری طرح سے ٹوٹ گیا تھا اور بھیڑ کو سنبھالنے والے پولس اہلکار کہیں نظر نہیں آرہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ میرے سیکورٹی اہلکار ریلی کے دوران میری پیش قدمی سے بہت بے چین تھے، اس لئے مجھے اپنی ریلی منسوخ کرنی پڑی۔ انہوں نے بتایا کہ میرے لوگوں نے مجھے ریلی نہ کرنے کا مشورہ دیا تھا، چنانچہ میں ریلی سے نکل گیا۔ کانگریس کے جنرل سکریٹری کے سی وینوگوپال نے کہا کہ ’بھارت جوڑو ریلی‘ میں سیکورٹی میں کوتاہی ہوئی ہے، ہمیں سیکورٹی نہیں مل رہ،  ایسے میں ہم راہل گاندھی کو اس طرح آگے نہیں بڑھنے دے سکتے۔

اس سے پہلے بانہال میں نیشنل کانفرنس کے لیڈر عمر عبداللہ نے کانگریس کے رکن پارلیمنٹ راہل گاندھی کے ساتھ ’بھارت جوڑو ریلی‘ میں شرکت کی۔ ریلی میں شامل ہونے سے پہلے انہوں نے کہا کہ وہ اس ریلی میں شامل ہوئے کیونکہ انہیں ملک کی شبیہ کی زیادہ فکر تھی۔ انہوں نے کہا کہ ہم اس میں کسی شخص کے امیج کے لئے نہیں بلکہ ملک کے امیج کے لئے اس میں شامل ہوئے۔ عمر عبداللہ نے مودی حکومت پر الزام لگایا کہ دہلی جموں و کشمیر کی آواز نہیں سنتی، ہماری آوازیں دبا دی جاتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ راہل گاندھی کا تعلق کشمیری پنڈت خاندان سے ہے، ہم انہیں خوش آمدید کہتے ہیں۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ اگر جموں و کشمیر میں انتخابات ہوتے ہیں تو بی جے پی کو پتہ چل جائے گا کہ وہ یہاں مقبول نہیں ہے، لوگ اس کے ساتھ نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی والے ڈرپوک اور بزدل ہیں۔
خبر کا کوڈ : 1038035
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش