0
Monday 27 Mar 2023 19:49

مہنگائی کے باعث سفید پوش خاندان بری طرح سے متاثر ہوچکا ہے، گورنر سندھ

مہنگائی کے باعث سفید پوش خاندان بری طرح سے متاثر ہوچکا ہے، گورنر سندھ
اسلام ٹائمز۔ گورنر سندھ کامران خان ٹیسوری نے کہا ہے کہ اس وقت شدید مہنگائی کے باعث سفید پوش خاندان بری طرح سے متاثر ہو چکا ہے، دوسری جانب خودساختہ مہنگائی نے ان کی کمر توڑ کر رکھ دی ہے، اس لئے زائد منافع خوروں کے خلاف سخت ایکشن لینے کی ضرورت ہے، اس ضمن میں پرائس کنٹرول انسپکٹر کے اختیارات ایڈمنسٹریٹرز کو بھی دیئے جائیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گورنر ہاؤس میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ گورنر سندھ نے مزید کہا کہ مہنگائی سے جہاں عام طبقہ متاثر ہے وہیں سرکاری ملازمین کے حالات بھی بہت ہی زیادہ خراب ہوچکے ہیں، اس لئے وزیراعلیٰ سندھ کو ملازمین کی تنخواہوں میں 30 سے 35 فیصد اضافہ کے لئے خط لکھ رہا ہوں، اسی طرح اگلے بجٹ میں کم از کم اجرت 50 ہزار روپے کرنے کی بھی تجویز دے رہا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ گوٹھوں کی ریگولرائزیشن کے حوالے سے قائم کمیٹی پر تمام اسٹیک ہولڈرز کو اعتراضات ہیں، اس ضمن میں وزیراعلیٰ سندھ کو خط لکھ دیا ہے کہ وہ اس معاملہ پر نظر ثانی کریں۔

انہوں نے کہا کہ مہنگائی روکنے اور مقررہ قیمتوں پر اشیائے ضروریہ کو یقینی بنانے کے لئے بھرپور کوششیں وقت کا اہم تقاضہ ہے، اس ضمن میں ماضی کی طرح 48 گھنٹوں میں نئی پرائس لسٹ مقرر کرنا ہوگی اور سبزی منڈی میں جاکر پرائس لسٹ کو ترتیب دینا چاہیئے۔ ایک سوال کے جواب میں گورنر سندھ نے کہا کہ پھل مہنگے ہونے کی اصل وجہ باغات کے مالکان ہیں، یہ بات کسی حد تک درست ہے کہ حالیہ سیلاب کے باعث پیداوار کم ہوئی ہے لیکن اس کا یہ مطلب بھی نہیں چار گنا زائد قیمتوں میں اضافہ کردیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت حالات بہت زیادہ خراب ہوتے جارہے ہیں، غریب افراد کو سہارا دینا ہماری اخلاقی ذمہ داری بھی ہے، اس لئے مخیر حضرات سے اپیل کررہا ہوں کہ وہ اس مشکل وقت میں آگے آئیں اور اپنے مشکلات کے گھرے بھائیوں کی بھرپور مدد کریں۔
خبر کا کوڈ : 1049029
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش