0
Friday 5 Jul 2024 22:26

ایران سے یورپ تک کے ٹرانزٹ ٹائم میں 2 روز کی کمی آئیگی، مہدی سبحانی

ایران سے یورپ تک کے ٹرانزٹ ٹائم میں 2 روز کی کمی آئیگی، مہدی سبحانی
اسلام ٹائمز۔ آرمینیا میں ایرانی سفیر مہدی سبحانی نے آج صبح ایرانی سفارتخانے میں منعقد ہونے والے صدارتی انتخابات میں حصہ لیا جس کے بعد ایرانی انتخابات اور ایران و آرمینیا کے درمیان ٹرانزٹ روٹ کے بارے پوچھے گئے مقامی میڈیا کے سوالات کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آرمینیا، شمالی-جنوبی راہداری کے ایک سنجیدہ متبادل کے طور پر، خصوصا جارجیا کے ذریعے بحیرۂ اسود تک ہمارے رستے کو کم کرتا ہے۔

مہدی سبحانی نے کہا کہ اس راستے کا، شمال-جنوب کوریڈور کے ایک حصے کے طور پر استعمال، حتمی ہے اور اس کے بنیادی ڈھانچے پر کام بھی شروع ہو چکا ہے جبکہ اس راہداری کے جنوبی حصے کا آغاز، آرمینیا میں آگاراک-کاجاران معاہدے سے ہوا ہے۔

آرمینیا میں ایرانی سفیر نے آرمینیائی حکومت کے اقدامات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ آرمینیائی حکومت نے ایران کی جانب جنوب میں انفراسٹرکچر اور سڑکوں کی ترقی کے لئے بجٹ کا ایک اہم حصہ مختص کر دیا ہے اور یہ ایک بہت ہی خوش آئند بات ہے۔ انہوں نے اس منصوبے کی وضاحت کرتے ہوئے مزید کہا کہ اس کے پہلے حصے پر، آگاراک سے کاجاران تک، عملدرآمد شروع ہو چکا ہے جبکہ اس کا دوسرا حصہ کاجاران ٹنل پر مشتمل ہے کہ جس کے لئے بھی ٹینڈر کا اعلان جلد ہی کر دیا جائے گا درحالیکہ اس پراجیکٹ کا تیسرا حصہ کاجاران ٹنل سے لے کر سیسیان تک ہے اور اس کے لئے ٹینڈر کا اعلان مستقبل قریب میں متوقع ہے۔

اس حوالے سے اپنی گفتگو کے آخر میں مہدی سبحانی کا کہنا تھا کہ کام شروع ہو چکا ہے اور ہم امید رکھتے ہیں کہ آئندہ چند برسوں میں ہی اس راستے کا بنیادی ڈھانچہ مکمل طور پر تیار ہو جائے گا جس سے ایران سے لے کر یورپ تک ٹرانزٹ کے کل وقت میں 2 روز کی کمی آئے گی۔
خبر کا کوڈ : 1145974
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

ہماری پیشکش