0
Sunday 11 Nov 2012 23:30

ایران کے جنگی طیاروں نے امریکی ڈرون پر فائرنگ کرکے اپنا فرض ادا کیا، محمد علی جعفری

ایران کے جنگی طیاروں نے امریکی ڈرون پر فائرنگ کرکے اپنا فرض ادا کیا، محمد علی جعفری
اسلام ٹائمز۔ سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی ایران کے سربراہ میجر جنرل محمد علی جعفری نے کہا ہے کہ سپاہ کے جنگی طیاروں نے خلیج فارس کی ایرانی فضائی حدود میں امریکی ڈرون کے طیارے کے خلاف اپنا فرض پوری طرح سے ادا کیا ہے۔ تہران میں خبرنگاروں سے بات چیت کرتے ہوئے سپاہ پاسدارن انقلاب اسلامی کے سربرہ کا کہنا تھا کہ چند روز پہلے ایک امریکی ڈرون طیارے نے جان بوجھ کر یا غلطی سے خلیج فارس کے اوپر ایران کی فضائی حدود میں داخل ہونے کی کوشش کی، لیکن سپاہ کے ایئر ڈیفینس سیسٹم اور جنگی طیاروں نے مکمل ہوشیاری کے ساتھ اس کوشش کو ناکام بنا دیا۔ انہوں نے متنبہ کرتے ہوئے کہا کہ اگر آئندہ بھی اس قسم کی کوشش کی گئی تو اس کا اسی طرح منہ توڑ جواب دیا جائے گا۔ میجر جنرل محمد علی جعفری کا کہنا تھا کہ ہمیں مختلف فیلڈز میں اپنی ترقی اور پیشرفت کو جاری رکھنا چاہیئے اور ممکن ہے کہ ہماری اس پیشرفت سے ہمارا دشمن خطرے کا احساس کرے، انکا کہنا تھا کہ دشمن کا اس طرح محسوس کرنا ایک طبعی عمل ہے۔ 

ادھر سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی ایران کے ڈپٹی چیف میجر جنرل حسین سلامی نے ایرانی جنگی طیاروں کی طرف سے امریکی ڈروں طیارے پر فائرنگ کی خبر پر اپنے ردعمل میں کہا ہے کہ اس بات کا ثبوت موجود ہے کہ ہم نے آج تک اپنی بین الاقوامی سرحدوں کے باہر کسی بھی ڈرون کے خلاف کارروائی نہیں کی اور آئندہ بھی ایسا نہیں کریں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے تہران میں میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ میجر جنرل سلامی کا کہنا تھا کہ ہم ڈرون طیاروں اور دشمن کی جارحیت کے بارے تمام بین الاقوامی قوانین سے مکمل آگاہ ہیں اور ان کا پوری طرح سے احترام کرتے ہیں۔ اس سوال کے جواب میں کہ آیا امریکی ڈرون ایرانی جنگی طیاروں کے فائرنگ کے وقت ایران کی فضائی حدود میں تھا؟ میجرل جنرل حسین سلامی کا جواب میں کہنا تھا کہ حتماً ایسا ہی تھا اور اگر ایسا نہ ہوتا تو ہم اس ڈورن پر فائرنگ نہ کرتے۔ 
خبر کا کوڈ : 211083
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب