0
Friday 6 Mar 2015 01:09
دہشتگردی کے خاتمے کیلئے پاک فوج کو تنہا نہیں چھوڑیں گے

سعودی حکومت پاکستان میں مذہبی فرقہ واریت پھیلا رہی ہے، ثروت اعجاز قادری

بندوق کے زور پر کسی کو اپنا مسلک مسلط کرنیکی اجازت نہیں دی جائیگی
سعودی حکومت پاکستان میں مذہبی فرقہ واریت پھیلا رہی ہے، ثروت اعجاز قادری
اسلام ٹائمز۔ پاکستان سنی تحریک کے سربراہ محمد ثروت اعجاز قادری نے کہا ہے کہ عوام اہلسنت بانیان پاکستان کی اولاد اور ملک کا قیمتی سرمایہ ہیں، دہشتگردی میں ملوث قوتیں نظریہ پاکستان کی باغی ہیں، دہشتگردوں کے اکابرین نے پاکستان بنانے کی مخالفت کی اور آج ان کی اولادیں پاکستان کو تباہ کرنے کیلئے دہشتگردی کر رہے ہیں، اہلسنت طالبان کی دہشتگردی سے خوفزدہ ہونے والے نہیں، ملک بچانے کے لئے اپنی جان، مال، اولاد سب قربان کر دیں گے، شہادت ہمارا زیور ہے، دہشتگردی کے خاتمے کے لئے پاک فوج کو تنہا نہیں چھوڑیں گے، اگر حکومت نے دہشتگردوں کے خلاف جہاد کا اعلان کیا، تو ہر گلی سے لبیک یارسول اللہ کی صدا گونجے گی، پاکستان اسلام کا قلعہ ہے، اسے مٹانے کا خواب دیکھنے والے خود صفحہ ہستی سے مٹ جائیں گے، دو قومی نظریہ کے خلاف انگلی اٹھانے والے آج دیکھ لیں کہ ان کی اولادوں نے دہشتگردی کے ذریعے اسلام اور پاکستان کے خوبصورت چہرے کو مسخ کرنے کی ناپاک کوشش کی ہے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے مرکز اہلسنت پر حیدرآباد سے آئے ہوئے علماء کرام کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

ثروت اعجاز قادری نے کہا کہ حکومت کو دہشتگردوں اور ان کو تحفظ دینے والوں کے خلاف بولڈ ایکشن لینا چاہیے، پاکستان میں کسی کی ذاتی اور سیاسی شریعت نہیں، صرف اور صرف شریعت محمد مصطفٰیﷺ کو ہی رائج کیا جائے گا، بندوق کے زور پر کسی کو اپنا مسلک مسلط کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ سعودی ریال کی ریل پیل سے مساجد اور مدارس کے نام پر دہشتگردی کے مراکز قائم کئے جا رہے ہیں، سعودی حکومت پاکستان میں مذہبی فرقہ واریت پھیلا رہی ہے۔ ثروت اعجاز قادری کا کہنا تھا کہ طالبان کا خوف صرف حکومتی ایوانوں میں ہے، عوام ایسے عناصر کو زندہ دفن کر دیں گے۔ سربراہ پاکستان سنی تحریک نے کہا کہ ملک میں دہشتگردی اور فرقہ واریت کو ہوا صرف حکمرانوں کی عدم دلچسپی کے سبب سے ہے، ورنہ کسی کی کوئی اوقات نہیں کہ وہ پاکستان میں غیر ملکی ایجنڈا مسلط کرے، عوام کی جان و مال اور عزت کو پامال کرنے والوں کو قانون اور آئین کے مطابق سزائیں دی جائیں۔
خبر کا کوڈ : 445209
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے