?>?> بلوچستان کو مزید 200 میگاواٹ بجلی کی فراہمی کم کردی گئی - اسلام ٹائمز
0
Monday 27 Apr 2015 21:45

بلوچستان کو مزید 200 میگاواٹ بجلی کی فراہمی کم کردی گئی

بلوچستان کو مزید 200 میگاواٹ بجلی کی فراہمی کم کردی گئی
اسلام ٹائمز۔ قومی گرڈ سسٹم سے بلوچستان کو بجلی کی سپلائی میں 200 میگاواٹ کی مزید کمی کردی گئی۔ جس سے بلوچستان میں بجلی کا شارٹ فال 1 ہزار 400 میگاواٹ تک پہنچ گیا۔ کیسکو حکام نے لوڈشیڈنگ کے دورانیہ میں اضافہ کردیا۔ کیسکو حکام کے مطابق صوبے میں کل طلب ایک ہزار 800 میگاواٹ کے مقابلے میں صرف چھ سو میگا واٹ بجلی میسر تھی۔ تاہم اتوار سے قومی گرڈ سسٹم سے بلوچستان کو بجلی کی سپلائی میں 200 میگاواٹ کی مزید کمی کردی گئی۔ جس کے باعث صوبے میں بجلی کا شارٹ فال 1 ہزار 400 میگاواٹ تک پہنچ گئی۔ 1 ہزار 400 میگاواٹ کا شارٹ فال پورا کرنے کے لئے کیسکو حکام کی جانب سے بجلی کے دورانیہ میں اضافہ کر دیا گیا۔ کوئٹہ شہر میں بجلی کی لوڈشیڈنگ میں آٹھ گھنٹے اور اندرون صوبہ 20 گھنٹے تک کی لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے۔ دوسری جانب شہر میں بجلی کی طویل لوڈشیڈنگ اور غیر اعلانیہ بندش کے باعث شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔ کاروبار زندگی متاثر ہوکر رہ گیا۔ واضح رہے کہ بجلی کی کمی کے باعث بلوچستان میں پہلے ہی بجلی کی شدید قلت و بحران کے باعث عوام مشکلات کا شکار ہیں۔ دیہی علاقوں میں زراعت تباہ اور عوام نان شبینہ کے محتاج ہوکر رہ گئے ہیں۔ بلوچستان میں زمیندار پہلے ہی کم بجلی کے باعث سراپا احتجاج ہیں۔ فصلیں تباہ اور باغات خشک ہو چکے ہیں، جس سے بلوچستان میں زراعت کے شعبے کو شدید دھچکا لگا ہے۔ واپڈا حکومت اور زمینداروں میں کچھ ہی روز قبل ایک معاہدہ طے پایا تھا۔ جس کے تحت دیہی علاقوں کو آٹھ گھنٹے بجلی فراہمی کا وعدہ کیا گیا تھا۔ لیکن اس معاہدے پر عمل نہیں ہو سکا، جبکہ اب بلوچستان کے حصے کی بجلی مزید کم کرنے سے بلوچستان میں بجلی نام کی ہی رہ جائے گی۔ لوڈشیڈنگ میں اضافہ اور دیہی علاقوں کو مکمل بجلی بند رہنے کا خدشہ ہے۔ پورے بلوچستان کو صرف 400 میگاواٹ بجلی فراہمی حکومت کی جانب سے بجلی فراہم نہ کرنے کے مترادف ہے۔ بلوچستان میں بجلی بحران سے یہاں مایوسیاں بڑھنے سمیت عوام کو شدید مالی مشکلات کا سامنا کرنا پڑیگا۔
خبر کا کوڈ : 456915
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

ہماری پیشکش