0
Monday 9 Nov 2015 23:14

اقبال کے پاکستان میں انتہا پسندوں اور فرقہ پرستوں کیلئے کوئی جگہ نہیں، علامہ اسدی

اقبال کے پاکستان میں انتہا پسندوں اور فرقہ پرستوں کیلئے کوئی جگہ نہیں، علامہ اسدی
اسلام ٹائمز۔ حکیم اُمت علامہ اقبال کے افکار و نظریات پر عمل پیرا ہو کر ہی ملک و قوم کو درپیش مشکلات پر قابو پایا جا سکتا ہے، ہم نے اقبال کے "خودی" کے درس کو بھلا کر اغیار پر بھروسہ کر کے اپنے لئے اور قوم کیلئے مسائل پیدا کئے، اقبال کے پاکستان میں انتہا پسندوں اور فرقہ پرستوں کیلئے کوئی جگہ نہیں، قیام پاکستان کیلئے اُمت نے وحدت و اخوت کیساتھ جدوجہد کی تھی، آج ہمیں پھر سے اسی راہ کو اپنانے کی ضروت ہے۔ ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین پنجاب کے سیکرٹری جنرل علامہ عبدالخالق اسدی نے صوبائی سیکرٹریٹ لاہور میں حکیم اُمت سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ بدقسمتی سے ہمارے حکمران اقبال اور قائد کے افکار و نظریات سے کوسوں دور ہیں، اگر آج بھی ہم حکیم اُمت کے افکار پر عمل پیرا ہوں تو وہ وقت دور نہیں جب پاکستان ایشیا میں لیڈنگ رول ادا کرے گا، معاشرے سے عدم برداشت انتہاپسندی، فرقہ واریت کے خاتمے کا واحد حل علامہ اقبال کے نظریات پر عمل پیرا ہونا ہے، قیام پاکستان میں تمام مکاتب فکر نے انہی قائدین کی رہنمائی میں ایک امت بن کر جدوجہد کی اور وطن عزیز کی آزادی کو ممکن بنایا، آج ہمیں پھر سے اسی جذبے اور ولولے کی ضرورت ہے، دشمن ہمیں مختلف گروہ اور فرقوں میں تقسیم کرکے ملکی سالمیت کیخلاف سازشوں میں مصروف ہے، آج ہمیں قومیت، لسانیت اور فرقوں میں تقسیم کر کے لڑایا جا رہا ہے، ایک مخصوص سوچ کو جسے پوری دنیا کی مہذب قومیں رد کرتی ہیں، اسے ہمارے اوپر مسلط کرنے کی کوشش ہو رہی ہے۔ علامہ اسدی کا مزید کہنا تھا کہ ہمارے تعلیمی نصاب میں حکیم امت علامہ اقبال اور قائداعظم کے افکار و نظریات کو وہ مقام نہیں دیا جا رہا جس کے وہ حقدار ہیں، زندہ قومیں ہمیشہ اپنے رہبروقائدین کے افکار کو فراموش نہیں کرتیں، اب بھی وقت ہے کہ ہم ہوش کے ناخن لیں اور پاکستان کے حقیقی نظریہ پر عمل کرکے ایک قوم بن کر دشمن کے عزائم کو خاک میں ملا دیں تاکہ بانیان پاکستان کے اصل مقاصد اور ہدف کو حاصل کر سکے۔
خبر کا کوڈ : 496689
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش