0
Monday 16 Nov 2015 09:16

اسلام میں دہشت پھیلانے والوں کے لئے کوئی جگہ نہیں، مفتی سعید

اسلام میں دہشت پھیلانے والوں کے لئے کوئی جگہ نہیں، مفتی سعید
اسلام ٹائمز۔ مقبوضہ کشمیر کے وزیراعلیٰ مفتی محمد سعید نے معصوم لوگوں پر دہشت گردانہ حملوں سے اسلام کی شبیہہ مسخ کرنے والے لوگوں کی مذمت کرتے ہوئے دُنیا بھر کے مسلمانوں پر زور دیا کہ وہ ان طاقتوں کے خلاف متحد ہوکر آواز اُٹھائیں تاکہ ان قوتوں کو الگ اور بے نقاب کیا جاسکے۔ وزیر اعلیٰ نے ان باتوں کا اظہار نئی دہلی میں عامر کلیمی عربک کالج کے اپنی نوعیت کے پہلے کنووکیشن کی صدارت کے دوران کیا جس کا آغاز قران کریم کی تلاوت سے کیا گیا۔ مختلف مسلم ممالک میں بڑھتے تشدد کا حوالہ دیتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہا کہ امام کعبہ بھی اس طرح کے دہشت گردانہ کارروائیوں کی مذمت کرتے ہیں جو اسلام کے پیغام امن کو زک پہنچانے کی غرض سے انجام دی جاتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہ مسلمانوں کے لئے مصیبت کا وقت ہے اور ہم سب کو خود غرض عناصر کو بے نقاب کرنے کے لئے متحد ہونا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ تشدد نہ کسی مسئلے کا حل تھا اور نہ ہوسکتا ہے۔ مراد آباد اور مرزاپور کی دستکاریوں کی مثال دیتے ہوئے وزیر اعلیٰ نے اس یقین کا اظہار کیا کہ جو لوگ اس طرح کی ہنر مندیوں سے مالا مال ہےں وہ ملک کی ترقی میں اپنا رول ادا کریںگے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں مسلمان دستکاروں کی صحیح رہنمائی کرنی چاہیے تاکہ وہ ملک کو ایک عالمی طاقت بنانے میں اپنا کردار ادا کرسکیں۔

کنووکیشن میں موجود شخصیات کی توجہ گذشتہ روز منعقد ہوئے یونیفائیڈ اکنامک فورم ٹریڈ سمٹ کی طرف مبذول کراتے ہوئے جو اگلے پانچ برس کے دوران دس ہزار کروڑ روپے کی سرمایہ کاری پر مرکوز ہے، وزیر اعلیٰ نے کہا کہ انہیں اس بات پر کافی خوشی ہے کہ اس کے نوجوان صدر ڈاکٹر احمد اے آر بخاری نے وسائل کو بروئے کار لاکر مسلمانوں میں اینٹر پرنر شپ بشمول بجلی، ڈھانچہ، ویر ہاﺅس، تعلیم، صحت، سیاحت اور قابل تجدید توانائی جیسے شعبوں کو فروغ دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یو ای ایف کو نیشنل اکنامک سمٹ کا اہتمام کرکے وزیراعظم ہند کو دعوت دینی چاہیے تاکہ مسلمانوں کی شخصیت کا دوسرا پہلو منظر عام پر لایا جاسکے۔
خبر کا کوڈ : 498090
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب