?>?> شام پر کسی بھی بیرونی ملک نے حملہ کیا تو نئی عالمی جنگ شروع ہو جائیگی، دمیتری مدودوف - اسلام ٹائمز
0
Friday 12 Feb 2016 10:09
امریکہ، سعودی عرب اور بعض یورپی ممالک شام میں عدم استحکام کے ذمہ دار ہیں

شام پر کسی بھی بیرونی ملک نے حملہ کیا تو نئی عالمی جنگ شروع ہو جائیگی، دمیتری مدودوف

شام پر کسی بھی بیرونی ملک نے حملہ کیا تو نئی عالمی جنگ شروع ہو جائیگی، دمیتری مدودوف
اسلام ٹائمز۔ روس کے وزیراعظم دمیتری مدودوف نے کہا ہے کہ شام پر کسی بھی بیرونی فوج کا حملہ بھرپور جنگ کا سبب بن سکتا ہے۔ اسلامی جمہوریا یران کے خبر رساں ادارے فارس نیوز کے مطابق روسی وزیراعظم  نے جرمن اخبار ہندلزبلات کو انٹرویو میں ٹھوس موقف اپناتے ہوئے کہا ہے کہ اگر شام پر کسی بھی بیرونی ملک نے حملہ کیا تو نئی عالمی جنگ شروع ہوجائے گی۔ سعودی عرب شام میں اپنی بری فوج بھیجنے پراصرار کر رہا ہے۔ روسی وزیراعظم نے کہا کہ شام میں کسی بھی ملک کی بری فوج کی مداخلت سے شام کا بحران حل نہیں ہوگا بلکہ مزید طولانی ہوجائے گا۔ روس کے وزیراعظم مدودوف نے کہا کہ امریکہ، سعودی عرب اور بعض یورپی ممالک شام میں عدم استحکام کے ذمہ دار ہیں۔ روس نے کچھ دنوں قبل خبردار کیا تھا کہ فضائی تصاویر سے معلوم ہوتا ہے کہ ترکی میں شام کی سرحد کے قریب فوجیں جمع ہیں اور فوجی ساز و سامان اکٹھا کیا گیا ہے۔ سعودی عرب نے بھی کہا ہے کہ وہ ترکی کی سرزمیں سے شام پر حملہ کرے گا۔ روسی حکام نے گذشتہ ہفتے بارہا علاقے کے بعض ملکوں منجملہ سعودی عرب کو خبردار کیا کہ جو دہشتگردی کے بہانے شام پر حملہ کرنا چاہتے ہیں۔ سعودی عرب نے کہا ہے کہ وہ عنقریب شام پر بری فوج سے حملہ کرے گا۔ صرف امریکہ نے سعودی عرب کے اس ارادے کا خیر مقدم کیا ہے اور اب تک کسی بھی عالمی ادارے نے اس حملے کی اجازت نہیں دی ہے۔
خبر کا کوڈ : 520231
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

ہماری پیشکش