0
Wednesday 27 Apr 2016 15:24

نیب کا اومنی گروپ کیخلاف تحقیقات کادائرہ وسیع، شرجیل میمن کی گرفتاری کی کوششیں بھی تیز

نیب کا اومنی گروپ کیخلاف تحقیقات کادائرہ وسیع، شرجیل میمن کی گرفتاری کی کوششیں بھی تیز
اسلام ٹائمز۔ قومی احتساب بیورو (نیب) نے اومنی گروپ کے خلاف تحقیقات کا دائرہ وسیع کر دیا ہے، اس ضمن میں معلوم ہوا ہے کہ اومنی گروپ کو دیئے جانے والے ٹریکٹرز کی تیاری کے ٹھیکوں کا ریکارڈ ضبط کرلیا گیا ہے، دوسری جانب نیب نے سندھ کے سابق وزیر اطلاعات شرجیل انعام میمن کی گرفتاری کیلئے کوششیں تیز کر دی ہیں۔ تفصیلات کے مطابق سابق صدر مملکت اور پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری کے قریبی دست راس انور مجید اور ان کے بیٹے عبدالغنی مجید (اے جی مجید) نے سندھ کے محکمہ زراعت سے ملی بھگت کرکے کاشت کاروں کو ٹریکٹر دینے کے حوالے سے ایک اسکیم متعارف کرائی، جس میں فی ٹریکٹر تین لاکھ روپے سندھ حکومت کے خزانے سے سبسڈی دینے کا منصوبہ بنایا گیا۔ سندھ حکومت نے مجموعی طور پر 7500 ٹریکٹر کی تیاری کا ٹھیکہ حاصل کیا، جس پر دو ارب روپے سندھ حکومت نے فراہم کئے۔

ٹریکٹر اسکیم کا فارم سندھ بینک کے ذریعے فراہم کرنے کا اعلان کیا گیا، لیکن یہ فارم صرف طاقت ور شخصیات کو ہی فراہم کئے گئے، اور عام کاشت کار اس اسکیم سے استفادہ حاصل نہیں کر سکے، اور بعد ازاں یہ ٹریکٹر افغانستان اسمگل کئے گئے۔ گذشتہ 8 سالوں کے دوران دیئے گئے ٹریکٹرز کی فہرست مرتب کی جا رہی ہے، تاکہ اس بات کا اندازہ لگایا جا سکے کہ عام کاشت کاروں کو کس حد تک سہولت فراہم کی گئی، اور طاقتور شخصیات نے اس سے کس حد تک فائدہ اٹھایا۔ سندھ حکومت کے خزانے کو دوہرا نقصان پہنچایا گیا، ایک طرف تو ٹریکٹر کا ٹھیکہ مہنگے داموں حاصل کیا گیا، اور دوسری جانب ٹریکٹر بھی بااثر افراد نے خود ہی حاصل کرلئے، اور سندھ حکومت کے خزانے کو بے دردی سے لوٹا گیا۔ نیب کی تحقیقات مکمل ہونے کے بعد اہم شخصیات کی گرفتاری کا امکان ہے۔ واضح رہے کہ نیب کی جانب سے شرجیل میمن کی گرفتاری کی کوششیں بھی تیز کر دی گئی ہیں۔
خبر کا کوڈ : 535522
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب