0
Wednesday 13 Jul 2016 17:05

نواز شریف سے فضل الرحمان کی ملاقات، کشمیر کی صورتحال پر تبادلہ خیال

نواز شریف سے فضل الرحمان  کی ملاقات، کشمیر کی صورتحال پر تبادلہ خیال
وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ مسائل کا حل صرف اور صرف مذاکرات ہے۔پاکستانی قوم احتجاج کی سیاست سے اکتا چکی ہے۔ عوام اب احتجاج کی سیاست نہیں کرنے دینگے۔ ذرائع کے مطابق وزیراعظم نواز شریف سے جاتی امرا میں جمعیت علما اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے ملاقات کی۔ اس موقع پر شہباز شریف، چودھری نثار اور اکرم درانی بھی شریک تھے۔ ملاقات کے دوران مولانا فضل الرحمان نے وزیراعظم کی خیریت دریافت کی اور نیک خواہشات کا اظہار کیا جب کہ انہوں نے کشمیری قیادت سے ملاقات کے بارے میں بھی وزیراعظم کو آگاہ کیا۔ ملاقات میں کشمیر سمیت قومی اہمیت کے دیگر معاملات پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ ملاقات کے دوران وزیراعظم نواز شریف کا کہنا تھا کہ پاکستان کا مستقبل روشن ہے اور عوام دھرنوں اور احتجاج کی سیاست قبول نہیں کرتے اس لئے مسائل کا حل صرف اور صرف مذاکرات میں ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اپنی سر زمین سے دہشتگردی کے خاتمے کیلئے ہم نے آپریشن ضرب عضب کا آغاز کیا جس کی بھرپور کامیابی پر بے حد خوش اور مطمئن ہیں، اب ہماری کوشش ہے کہ 2018 تک ملک سے لوڈشیڈنگ کا خاتمہ بھی کیا جائے۔ وزیراعظم نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کے ہاتھوں تحریک آزادی کے کمانڈر برہان مظفر وانی سمیت درجنوں افراد کی شہادت پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ حکومت پاکستان کشمیریوں کے جذبات کی قدر کرتی ہے، ظلم اور تشدد سے کشمیریوں کی آواز کو دبایا نہیں جا سکتا، پاکستان کشمیریوں کی ہر ممکن اخلاقی و سیاسی حمایت جاری رکھے گا۔
خبر کا کوڈ : 552369
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب