0
Wednesday 26 Oct 2016 19:39

طاہر القادری کے تحریک انصاف کے دھرنے میں شرکت کا مقصد بڑی گڑبڑ ہے، منظور وسان

طاہر القادری کے تحریک انصاف کے دھرنے میں شرکت کا مقصد بڑی گڑبڑ ہے، منظور وسان
اسلام ٹائمز۔ وزیر صنعت و تجارت سندھ منظور وسان نے کہا ہے کہ آئندہ انتخابات 2018ء میں ہوں گے اور مسلم لیگ (ن)، پیپلز پارٹی اور تحریک انصاف کو مینڈیٹ ملے گا، لیکن عمران خان کے ہاتھ میں وزیراعظم کی لکیر نہیں ہے۔ کراچی میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے منظور وسان نے کہا کہ ملک میں حکومتیں اکتوبر اور نومبر میں گرتی ہیں، لیکن اس بار جمہوریت کو خطرات نہیں ہیں، نومبر کے مہینے میں سیاسی اور غیر سیاسی اہم عہدوں پر تبدیلیاں ہوں گی، آئندہ انتخابات 2018ء میں ہوں گے اور اس میں مسلم لیگ (ن)، پیپلز پارٹی اور تحریک انصاف کو مینڈیٹ ملے گا، لیکن عمران خان کے ہاتھ میں وزیراعظم کی لکیر نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم لندن کتنا بھی زور مار لے، ان کا کوئی مستقبل نہیں، مستقبل صرف ایم کیو ایم پاکستان کا ہے۔ صوبائی وزیر کا کہنا تھا کہ طاہرالقادری اسلام آباد میں تحریک انصاف کے دھرنے میں شرکت کریں گے اور اس کا مقصد بڑی گڑبڑ ہے، ان کا اسلام آباد دھرنے میں شامل ہونا کسی اشارے کا نتیجہ ہے۔ سانحہ کارساز کی تحقیقات سے متعلق انہوں نے کہا کہ سانحہ کارساز کی تحقیقات میں اس وقت کے وزیراعلیٰ اور میئر کراچی کو شامل تفتیش کیا جائے، کیونکہ دونوں اہم شخصیات کو شاملِ تفتیش کئے بغیر تحقیقات شفاف ہونا ممکن نہیں۔
خبر کا کوڈ : 578642
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے