0
Saturday 29 Oct 2016 22:52

پاکستان پیپلزپارٹی نے وزیر داخلہ چوہدری نثار سے استعفیٰ کا مطالبہ کردیا

پاکستان پیپلزپارٹی نے وزیر داخلہ چوہدری نثار سے استعفیٰ کا مطالبہ کردیا
اسلام ٹائمز۔ پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) نے وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کردیا۔ چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری کی سربراہی میں اجلاس کے بعد پارٹی کے دیگر رہنماؤں کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے فرحت اللہ بابر کا کہنا تھا کہ ملک میں بگاڑ کی وجہ نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد نہ ہونا ہے۔ رہنما پیپلز پارٹی نے وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان سے استعفے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ وزارت داخلہ کالعدم تنظیموں کو کام سے روکنے میں ناکام ہو چکی ہے اس لیے چوہدری نثار کو عہدے سے مستعفی ہو جانا چاہیے اور اگر وہ خود مستعفی نہیں ہوتے تو وزیر اعظم کو ان سے استعفیٰ لے لینا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ چوہدری نثار نے نیشنل ایکشن پلان کے برخلاف کالعدم تنظیموں کے نمائندوں سے ملاقات کی، جس کے بعد ان کا عہدے پر رہنے کا کوئی اخلاقی جواز نہیں۔ اس موقع پر اعتزاز احسن نے کہا کہ اجلاس میں بہت سے معاملات پر غور ہوا، جبکہ اجلاس کے دوران کراچی میں سانحہ ہوا جس پر دکھ اور افسوس ہے۔

اسلام آباد کی صورتحال کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ حکومت نے دارالحکومت میں نوجوانوں کے اجتماع پر تشدد کیا، اسلام آباد میں بربریت ہوئی اور لاٹھی چارج ہوا جس کی ہم مذمت کرتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ اسلام آباد میں جو کچھ ہو رہا ہے وہ حکومت کی نااہلی کی اعلیٰ مثال ہے۔ پرویز رشید کے مستعفی ہونے کے حوالے سے اعتزاز احسن نے کہا کہ پرویز رشید سے استعفیٰ لینے سے ظاہر ہوتا ہے کہ نواز شریف کے پاؤں پھسل گئے ہیں اور اب حکومت کا اپنا توازن برقرار رکھنا مشکل ہو گیا۔ پیپلز پارٹی کے مطالبات کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ پاناما پیپرز انکوائری بل منظوری میں سب کے لیے یکساں احتساب کی بات کی ہے، حکومت سے کہا کہ وزیر خارجہ مقرر کیا جائے لیکن یہ بھی نہ ہوا، دنیا میں تبدیلیاں آ رہی ہیں لیکن وزیر خارجہ مقرر کرنے سے نواز شریف گریزاں ہیں۔ واضح رہے کہ قبل ازیں وزیر اعظم نوازشریف نے اہم خبر کے حوالے سے کوتاہی برتنے پر پرویز رشید سے وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات کا قلم دان واپس لے لیا تھا۔
خبر کا کوڈ : 579449
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے