0
Friday 16 Dec 2016 21:27

مسلمانانِ عالم فسادات اور مسلکی اختلافات کو مٹاکر رحمت للعالمین کی خوشنودی حاصل کریں، مولانا غلام رسول حامی

مسلمانانِ عالم فسادات اور مسلکی اختلافات کو مٹاکر رحمت للعالمین کی خوشنودی حاصل کریں، مولانا غلام رسول حامی
اسلام ٹائمز۔ جموں و کشمیر پیروان ولایت کے زیر اہتمام بارہمولہ کے ہانجی ویرہ پٹن علاقے میں عید میلاد النبی (ص) اور ہفتہ وحدت کا ایک پروقار پروگرام منعقد ہوا۔ میلاد النبی (ص) کی اس تقریب سے خطاب کرتے ہوئے جموں و کشمیر پیروان ولایت کے صدر مولانا شبیر احمد صوفی نے پیامبر اسلام حضرت محمد مصطفٰی (ص) اور فرزند رسول حضرت امام جعفر صادق (ع) کی ولادت باسعادت پر مسلمانوں کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ ربیع الاول کا مہینہ ایک ایسا بابرکت اور عظیم الشان مہینہ ہے جس مہینہ میں رسول اکرم (ص) کے مبارک قدم سے پوری کائنات منور ہوئی اور جہالت و گمراہی کا جنازہ نکل گیا۔ اس دوران مقبوضہ کشمیر کے مشہور و معروف عالم دین اور جموں و کشمیر کاروان اسلامی کے امیر مولانا غلام رسول حامی نے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے بانی اسلام پیغمبر اکرم (ص) کے اخلاق و اوصاف بیان کرتے ہوئے کہا کہ دین اسلام کے دشمن ہر وقت شیعہ اور سنی میں اختلاف پیدا کرکے وحدت اسلامی کے قلعے کو ٹھیس پہنچانا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا مسلمانانِ عالم پیغمبرِ اسلام (ص) کی سیرت اور سنت سے درس حاصل کر کے شیعہ سنی فسادات اور مسلکی اختلافات کو مٹا کر رحمت للعالمین کی خوشنودی حاصل کریں۔

میلاد النبی (ص) کی اس تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مولانا شیخ غلام حسین جعفری نے رسول گرامی اسلام (ص) اور حضرت امام جعفر صادق (ع) کی سیرت پر تفصیل سے روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ رسول اکرم (ص) نے سب سے پہلے ذات پات، رنگ و نسل اور قبیلہ پروری کا خاتمہ کر کے اخوت اور بھائی چارہ کا درس دیا اور آج نام نہاد مسلم حکمران مسلمانوں کے صفوں میں اختلافات پیدا کرکے رسول اسلام (ص) کے امتی ہونے کا دعوے بھی کررہے ہیں۔ سامراجی میڈیا کو ہدف تنقید بناتے ہوئے انہوں نے کہا کشمیر، فلسطین اور دیگر اسلامی مملکتوں میں اس میڈیا نے جو رول ادا کیا وہ ناقابل برداشت ہے۔ انہوں نے کہا عالم اسلام کے  درمیان اتحاد تب تک ناممکن ہے جب تک وہ اسوۂ رسول اللہ (ص) اور سیرت اہلبیت (ع) پر عمل نہ کریں گے، انہوں نے جمہوری اسلامی ایران میں جاری عالمی وحدت کانفرنس کی کامیابی پر مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ وحدت کانفرنس میں دنیائے اسلام کے شیعہ سنی دانشوروں اور علمائے کرام کا ایک ساتھ جمع ہونا ایک خوش آئند بات ہے اور دشمنان اسلام کے منہ پر زوردار طمانچہ ہے۔
خبر کا کوڈ : 592176
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش