0
Wednesday 28 Dec 2016 13:46

اوباما انتظامیہ نئے صدر ٹرمپ کی راہ میں بارودی سرنگیں بچھا رہی ہے، روسی وزارت خارجہ

اوباما انتظامیہ نئے صدر ٹرمپ کی راہ میں بارودی سرنگیں بچھا رہی ہے، روسی وزارت خارجہ
اسلام ٹائمز۔ ماسکو میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے روسی وزارت خارجہ کی ترجمان ماریا زخاروف کا کہنا ہے کہ امریکا کا شامی باغیوں کو اسلحہ فراہمی پر پابندی اٹھانا جارحانہ اقدام ہے، امریکی اقدام سے شام میں روسی فوج کے لیے خطرات بڑھ جائیں گے، اوباما انتظامیہ نئے صدر ٹرمپ کی راہ میں بارودی سرنگیں بچھا رہی ہے۔ واشنگٹن اس وقت بھی روس مخالف پالسییوں پر عمل پیرا ہے اور امید ہے کہ آنے والی نئی وائٹ ہائوس انتظامیہ زیادہ سمجھ دار ہو گی۔ جبکہ امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان مارک ٹونر نے واشنگٹن میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکا شام مخالف گروہوں کو طیارہ شکن میزائل فراہم نہیں کررہا ہے۔ امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان کا واشنگٹن میں کہنا تھا کہ ترک صدر کی طرف سے بھی امریکا پر شامی دہشت گرد گروہوں کی مدد کا الزام لگایا گیا ہے، جو مضحکہ خیز ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسرائیل کے خلاف سلامتی کونسل کی قرارداد کے پیچھے اوباما انتظامیہ نہیں ہے، اسرائیل فلسطین تنازع کے حل اور قیام امن کے لیے مایوس نہیں ہیں، اسرائیل اور فلسطین کو قیام امن کے حوالے سے مایوس نہیں ہونا چاہیے۔ دوسری جانب ترک صدر رجب طیب اردوان نے انقرہ میں پریس کانفرنس میں کہا کہ ان کے پاس ٹھوس شواہد ہیں کہ امریکا شام میں سرگرم باغی گروپوں سمیت داعش اور کرد باغیوں کو اسلحہ اور مدد فراہم کر رہا ہے اور الٹا الزام ہم پر لگایا جاتا ہے۔
خبر کا کوڈ : 595246
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب