0
Sunday 1 Jan 2017 09:32

آئی ایس پی آر نے 2016ء میں پاک فوج کی کامیابیوں کی تفصیلات جاری کر دیں

آئی ایس پی آر نے 2016ء میں پاک فوج کی کامیابیوں کی تفصیلات جاری کر دیں
اسلام ٹائمز۔ پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل آصف غفور نے کہا ہے کہ ملک کا دفاع ناقابل تسخیر ہے اور پاک فوج نے 2016ء میں کئی اہم کامیابیاں حاصل کی ہیں جبکہ پاکستان 2017ء میں امن واستحکام کی جانب بڑھے گا، پاک فوج نے 2016ء میں ’’بابر کروز میزائل‘‘ کے توسیع شدہ ورژن اور ملک میں تیار کئے گئے’’ رعد میزائل‘‘ کا کامیاب تجربہ کیا، دہشتگردوں کیخلاف آپریشن ضرب عضب میں بھی کئی اہم کامیابیاں حاصل کیں، مشاق طیاروں کی فروخت کیلئے نائجیریا سے معاہدہ طے پایا، 2016ء کے دوران بھارتی فوج کی جانب سے 379 مرتبہ سیز فائر کی خلاف ورزیاں کی گئیں جن میں 46 پاکستانی شہری شہید ہوئے، جوابی کارروائیوں میں بھارتی 40 سکیورٹی اہلکار ہلاک ہوئے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے ڈائریکٹر میجر جنرل آصف غفور نے 2016ء کے دوران پاک فوج کی کامیابیوں کی تفصیلات جاری کرتے ہوئے کہا کہ ملک کا دفاع ناقابل تسخیر ہے اور پاک فوج نے 2016ء میں کئی اہم کامیابیاں حاصل کی ہیں جبکہ پاکستان 2017ء میں امن واستحکام کی جانب بڑھے گا، پاک فوج نے 2016ء میں’’بابر کروز میزائل‘‘ کے توسیع شدہ ورژن اور ملک میں تیار کئے گئے رعد میزائل کا کامیاب تجربہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ 870 کلومیٹر کے روڈ نیٹ ورک پر سی پیک کی سیکیورٹی اور اسے حقیقت بنانے کیلئے انتظامات کئے گئے اور سپیشل سیکیورٹی ڈویژن کی تعداد میں اضافہ کیا گیا، پاک بحریہ نے این ڈی شپ میزائل ضرب اور زمین سے زمین پر مار کرنیوالے’’این ٹی شپ میزائل‘‘ شمالی بحیرہ عرب میں سوورڈ کلاس فری گیٹ پی این ایس اصلت سے فائر کئے اور ان کا کامیاب تجربہ کیا، پاک بحریہ نے پاکستان کے جنوبی ساحل پر پاکستانی پانیوں میں داخلے کی ناکام کوشش کرنیوالی بھارت کی سب میرین کا سراغ لگا کر اپنی نگرانی اور آپریشنل تیاریاں ثابت کیں۔

ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ سی پیک میری ٹائم سیکیورٹی کیلئے ٹاسک فورس 88 بڑھائی گئی، پاک فضائیہ نے ضرب عضب میں ساتھ دیتے ہوئے دہشتگردوں کے ٹھکانوں کو کامیابی سے نشانہ بنایا۔ انہوں نے کہا کہ پی ایف سی ون 30 نے برطانیہ میں رائل انٹرنیشنل ٹیٹو شو میں حصہ لینے والے 50 ممالک میں بہترین اے سی ٹرافی جیتی۔ انہوں نے کہا کہ مشاق طیاروں کی فراہمی سے نائجیریا کیساتھ دفاعی تعاون کو فروغ دیا گیا۔ آئی ایس پی آر کے مطابق کراچی آپریشن میں جرائم پیشہ عناصر کیخلاف 1992 آپریشنز کئے گئے جن میں 2847 جرائم پیشہ افراد، 446 ٹارگٹ کلرز جبکہ 350 دہشتگردوں کو گرفتار کیا گیا، کراچی آپریشن کی وجہ سے شہر میں 91 فیصد ٹارگٹ کلنگ جبکہ دہشتگردی کے واقعات میں 72 فیصد کمی ہوئی ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق فوجی عدالتوں میں 274 مجرموں کو سزائیں دی گئیں، فوجی عدالتوں سے سزائیں پانے والے 12 مجرموں کو پھانسی دی گئی۔ آئی ایس پی آر کے مطابق آپریشن ضرب عضب کی وجہ سے بے گھر ہونیوالے 82 فیصد افراد کی اپنے علاقوں میں واپسی کا عمل مکمل ہو گیا ہے۔ نیشنل ایکشن پلان کے تحت ملک بھر میں گزشتہ سال 25620 انٹیلی جنس بیس آپریشنز کئے گئے جن میں پنجاب میں 11735، بلوچستان میں 294، سندھ میں 646، خیبرپختونخوا اور فاٹا میں 4007 اور گلگت بلتستان میں 465 آپریشن شامل ہیں جن میں مجموعی طور پر 3500 دہشتگردوں کو ہلاک کیا گیا اور آپریشنز کے دوران 18 ہزار 87 چھوٹے بڑے ہتھیار پکڑے، آپریشنز کے دوران 7599 بارودی فیکٹریاں، 992 دہشتگردوں کے ٹھکانے تباہ کئے گئے اس کے علاوہ 253 ٹن دھماکہ خیز مواد تباہ کئے گئے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق گزشتہ سال دہشتگردی کی کارروائیوں میں 583 فوجی شہید جبکہ 2108 زخمی ہوئے۔ آئی ایس پی آر کے مطابق خیبرپختونخوا اور سماجی ترقی کیلئے مجموعی طور پر 567 منصوبے شروع کئے گئے جن میں 983 کلومیٹر سڑکوں کے جال بچھائے گئے اس کے علاوہ کھیلوں کے 2 سٹیڈیم اور وانا میں 54 کلومیٹر ٹرانسمیشن تعمیر کی گئی۔
خبر کا کوڈ : 596132
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب