0
Thursday 17 Aug 2017 23:11

محکمہ تعلیم سندھ میں 13 ہزار بھرتیاں جائز قرار، پیر مظہر الحق کیخلاف نیب تحقیقات ختم

محکمہ تعلیم سندھ میں 13 ہزار بھرتیاں جائز قرار، پیر مظہر الحق کیخلاف نیب تحقیقات ختم
اسلام ٹائمز۔ قومی احتساب بیورو (نیب) نے سندھ میں پیپلز پارٹی کے سابق صوبائی وزیر پیر مظہر الحق کے خلاف محکمہ تعلیم میں 13 ہزار جعلی بھرتیوں کی انکوائری ختم کردی ہے۔ سندھ ہائی کورٹ میں پیر مظہرالحق کی نیب انکوائری میں درخواستِ ضمانت کی سماعت ہوئی۔ نیب کے پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ انکوائری مکمل ہوگئی اور مزید تحقیقات کی ضرورت نہیں ہے، انکوائری کے نتائج کے مطابق پیر مظہر کے دور میں محکمہ تعلیم میں کوئی کرپشن نہیں ہوئی، اس میں نا تو سرکاری دفتر کا استعمال ہوا اور نہ ہی سرکاری خزانے کو کوئی نقصان پہنچا، اس لئے جعلی بھرتیوں کی انکوائری ختم کردی گئی ہے۔ سابق سینئر وزیر تعلیم پیر مظہرالحق سمیت محکمہ تعلیم کے افسران پر جعلی بھرتیوں کا الزام تھا۔ نیب نے اکتوبر 2015ء میں پیر مظہر الحق کے دورِ وزارت میں 13 ہزار سے زائد بھرتیوں کی تحقیقات شروع کی تھی۔
خبر کا کوڈ : 662104
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب