0
Saturday 23 Sep 2017 11:52
مجلس خبرگان رہبری سے خطاب

دوسروں کے سہارے کی امید رکھنا غلطی ہے، رہبر انقلاب اسلامی

میں دنیا سے رابطہ منقطع کرنے کا حامی نہیں ہوں
دوسروں کے سہارے کی امید رکھنا غلطی ہے، رہبر انقلاب اسلامی
اسلام ٹائمز۔ انقلاب اسلامی ایران کی سپریم کونسل کے اراکین نے رہبر معظم انقلاب اسلامی حضرت آیت اللہ سید علی خامنہ ای سے ملاقات کی۔ رہبر انقلاب کی ویب سائٹ خامنہ ای ڈاٹ آئی آر کے مطابق رہبر انقلاب نے مجلس خبرگان کے معزز اراکین سے ملاقات میں سپریم کونسل، ایران کے داخلی مسائل اور بین الاقوامی مسائل پر گفتگو کی۔ رہبر انقلاب نے کہا کہ ہمارے ملک میں با استعداد اور با ارادہ نوجوانوں کی کمی نہیں ہے، ہمارے پاس ماہر افراد موجود ہیں۔ اچھے کسان، کارخانہ جات، تولیدکنندگان، استاد وغیرہ موجود ہیں۔ ایسے افراد کے ذمے کام لگائے جائیں، یہ لوگ ہیں جو ملک کی مشکلات کو حل کر سکتے ہیں۔


امام سید علی خامنہ ای نے بین الاقوامی مسائل پر بات کرتے ہوئے کہا کہ میں یہ نہیں کہتا کہ دنیا سے رابطہ منقطع کرلیں۔ ، لیکن ہمیں اپنی عظیم قدرت اور طاقت کو دوسروں کے عصا سے تبدیل نہیں کرنا چاہیئے۔ اگر ہم اپنے پاؤں پر کھڑے ہونے کے بجائے دوسروں کے سہارے کی تلاش میں ہوں تو یہ بہت بڑی غلطی ہو گی۔ بین الاقوامی روابط میں مذاکرات انجام دینا کوئی عیب نہیں ہے لیکن میرا ایٹمی مذاکرات کے بارے میں جو اشکال تھا وہ یہ ہے کہ ہمیں مذاکرات کرنا چاہئے میں اس کا مخالف نہیں ہوں لیکن ان مذاکرات میں باریک بینی کے ساتھ اس بات کا دیہان رکھنا اور خیال کیا جانا چاہیئے کہ دوسری جانب جو غلطی اس کا دل چاہے انجام نہ دسکے۔


انہوں نے امریکی صدر کی تقریر کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ آپ نے اس امریکی صدر کی اقوام متحدہ میں جاہلانہ تقریر سنی ہو گی۔ اس کی تقریر کی ادبیات بہت بری اور گھٹیا قسم کی تھی۔ گینگسٹر ادبیات اور بے معنا دھمکیاں اور سو فیصد غلط تجزیاتی تقریر تھی۔ ایک ایسی تقریر تھی جو جھوٹ اور غلط معلومات سے بھری ہوئی تھی، شاید اس تقریر میں بیس واضح جھوٹ موجود تھے۔ ایسی تقریر ان کے پریشانی، غصے اور بے چارگی کی روشن علامت ہے۔


اس ملاقات کے آغاز میں آیت اللہ احمد جنتی اور آیت اللہ محمود ہاشمی شاہرودی نے مجلس خبرگان رہبری کے تیسرے رسمی اجلاس کی رپورٹ پیش کی۔
خبر کا کوڈ : 671231
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے