0
Friday 20 Apr 2018 17:21

سابق صدر پرویز مشرف کے خلاف انکوائری کی منظوری

سابق صدر پرویز مشرف کے خلاف انکوائری کی منظوری
اسلام ٹائمز۔ نیب کے ایگزیکٹو بورڈ نے آمدن سے زائد اثاثوں اور اختیارات کے ناجائز استعمال کے الزام میں سابق صدر پرویز مشرف کےخلاف انکوائری کی منظوری دے دی۔ قومی احتساب بیورو (نیب) کے چیئرمین جسٹس (ر) جاوید اقبال کی زیر صدارت نیب ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس ہوا، جس میں مختلف شخصیات کےخلاف انکوائری کی منظوری دی گئی جس میں سب سے اہم سابق صدر پرویز مشرف کےخلاف انکوائری کی منظوری شامل ہے۔ نیب کی جانب سےجاری اعلامیہ کے مطابق سابق صدر پرویز مشرف کے خلاف آمدن سے زائد اثاثوں اور اختیارات کے ناجائز استعمال پر انکوائری کی منظوری دی گئی ہے۔ نیب اعلامیے کےمطابق ایگزیکٹو بورڈ نے بدعنوانی اور اختیارات کے ناجائز استعمال کے الزام میں وفاقی وزیر ہاؤسنگ اکرم درانی کے خلاف بھی انکوائری کی منظوری دی ہے جب کہ ان کے ہمراہ پی ایچ اے فاؤنڈیشن کے ایم ڈی اور سی ای او کے خلاف بھی انکوائری کی منظوری دی گئی ہے۔ نیب اعلامیے میں بتایا گیا ہےکہ ایگزیکٹو بورڈ کے اجلاس میں مسلم لیگ (ق) کے رہنما پرویز الٰہی کے صاحبزادے مونس الٰہی کے خلاف بھی پاناما پیپرز میں آف شور کمپنی بنانے اور بدعنوانی کے الزام میں انکوائری کی منظوری دی گئی ہے۔ اس کے علاوہ سابق چیئرمین سی ڈی اے امتیاز عنایت الہی کے خلاف کرپشن کا ریفرنس دائرکرنےکی منظوری دی گئی جب کہ کیوبا میں پاکستانی سفیر کامران شفیع کے خلاف بھی انکوائری کی منظوری دی گئی ہے۔ اعلامیے کے مطابق ایگزیکٹو بورڈ نے سابق چیئرمین فیڈرل بورڈ آف ریونیو عبداللہ یوسف کے خلاف بھی انکوائری کی منظوری دی ہے، ملزم کے خلاف پاناما میں آف شور کمپنی بنانے اور بدعنوانی کا الزام ہے۔
خبر کا کوڈ : 719285
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش