0
Thursday 23 Aug 2018 00:09

سٹاف سے جھوٹ بلوانے کے معاملے پر امریکی صدر کا مواخذہ ہونے کا امکان

سٹاف سے جھوٹ بلوانے کے معاملے پر امریکی صدر کا مواخذہ ہونے کا امکان
اسلام ٹائمز۔ وائٹ ہاوس کے عملے کو اپنی خاطر جھوٹ بلوانے کا معاملے پر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا مواخذہ ہونے کا امکان ہے۔ امریکی میڈیا کے مطابق ڈونلڈ ٹرمپ کے سابق وکیل مائیکل کوہن نے ایف بی آئی کے ساتھ پلی بارگین کر تے ہوئے ٹیکس چوری، بینک سے جھوٹ بولنے اور انتخابی مہم کی خلاف ورزی کے 8 الزامات تسلیم کر لیے ہیں۔ مائیکل کوہن نے فحش فلموں کی اداکارہ اسٹارمی ڈینئل سمیت دو خواتین کو ٹرمپ سے متعلق منفی خبریں دینے سے روکنے کے لیے خاموش کرانے کا اعتراف بھی کر لیا۔ دوسری جانب ٹرمپ کے سابق کمپین منیجر پاول مینافورٹ پر بھی جرم ثابت ہو گیا اور انہیں ٹیکس فراڈ سمیت 8 الزامات میں مجرم قرار دے دیا گیا ہے۔ امریکی صدر ٹرمپ نے پال مینافورٹ کو مجرم قرار دینے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وہ تو بڑے اچھے آدمی ہیں، پال مینا فورٹ کو مجرم قرار دینا ان کے خلاف مہم کا حصہ ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ اس کیس میں انھیں ملوث نہیں کیا گیا اور روس کی مبینہ مداخلت سے بھی ان کا کوئی تعلق نہیں ہے۔ اس کے علاوہ امریکہ کی حکمراں جماعت ری پبلکن پارٹی کے رکن کانگریس اور اہلیہ پر انتخابی مہم کی رقم ذاتی استعمال پر خرچ کرنے کی فرد جرم بھی عائد ہو گئی ہے۔ ڈنکن ہنٹر اور اہلیہ مارگریٹ نے انتخابی مہم کے ڈھائی لاکھ ڈالر خرچ کیے۔ ریپبلکن رکن پر لاکھوں ڈالر اٹلی کے کلبوں پر لٹانے، دانتوں کے علاج پر خرچ کرنے کے الزام ہے۔ کیلیفورنیا سے رکن کانگریس ڈنکن ہنٹر جمعرات کو سین ڈیاگو کی عدالت میں پیش ہوں گے۔ ڈونلڈ ٹرمپ کے اٹارنی کا کہنا ہے کہ کوہن پاول پر عائد الزامات میں صدر کے خلاف کسی غلط کام کا الزام نہیں ہے۔ کوہن کے وکیل کا کہنا ہے کہ الیکشن ادائیگیاں ان کے مؤکل کے لیے جرم ہے تو ڈونلڈ ٹرمپ کے لیےکیوں نہیں؟
خبر کا کوڈ : 745883
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش