0
Saturday 1 Sep 2018 22:51

شیری مزاری کا بیان افسوسناک ہے، اصغر خان اچکزئی

شیری مزاری کا بیان افسوسناک ہے، اصغر خان اچکزئی
اسلام ٹائمز۔ بلوچستان اسمبلی میں عوامی نیشنل پارٹی کے پارلیمانی لیڈر اصغر خان اچکزئی نے وفاقی وزیر شیریں مزاری کے پشتونوں سے متعلق ریمارکس کو افسوسناک اور توہین آمیز قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ پشتون دہشت گرد نہیں، بلکہ دہشت گردی کا شکار ہیں۔ ہم لاشیں بھی اٹھا رہے ہیں اور طعنے بھی سن رہے ہیں۔ پشتونوں کا دہشتگردی سے کوئی تعلق نہیں، بلکہ پشتون بحیثیت قوم چالیس سال سے دہشت گردی کا شکار ہیں۔ وہ جمعے کے روز بلوچستان اسمبلی کے اجلاس میں پوائنٹ آف آرڈر پر اظہار خیال کر رہے تھے۔ اصغر خان اچکزئی نے وفاقی وزیر انسانی حقوق شیریں مزاری کے پشتونوں سے متعلق ریمارکس کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ گذشتہ روز وفاقی وزیر نے یہ کہا ہے کہ دہشت گرد اور پشتون ملتے جلتے ہیں۔ انہوں نے نہ صرف اپنے بیان کے ذریعے پشتونوں کی دل آزاری کی، بلکہ تاریخ کو بھی مسخ کرنے کی کوشش کی، جس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔

یہ عجیب بات ہے کہ چالیس سال سے پشتونوں کی سرزمین پر آگ لگی ہوئی ہے، اس سے متاثر بھی پشتون ہو رہے ہیں۔ دہشتگردی کا شکار بھی پشتون ہیں، لاشیں بھی ہم اٹھا رہے ہیں اور پھر طعنے بھی دیئے جاتے ہیں۔ ایک وفاقی وزیر کی جانب سے اس قسم کی باتیں قابل مذمت ہیں۔ یہ بات کسی سے پوشیدہ نہیں کہ بحیثیت پشتون پوری قوم دہشت گردی سے متاثر ہیں۔ اس کے باوجود ہمیں ہی دہشتگرد قرار دیا جارہا ہے۔ تاریخ گواہ ہے کہ پشتون امن پسند اور روایات پسند رہے ہیں۔ پشتونوں کا دہشتگردی سے کوئی تعلق نہیں۔ ان کی سرزمین پر آنے والے دہشت گردوں کا پشتونوں سے کوئی تعلق نہیں، بلکہ وہ جس کی میزبانی میں آئے، اس سے بھی سب آگاہ ہیں۔ پورا ایوان وفاقی وزیر کے اس بیان کی مذمت کریں اور اس حوالے سے اپنا احتجاج ریکارڈ کرائیں۔
خبر کا کوڈ : 747492
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب