0
Sunday 23 Sep 2018 23:31

بجٹ اجلاس میں سندھ حکومت اور اپوزیشن کے مابین سخت معرکہ آرائی کا امکان

بجٹ اجلاس میں سندھ حکومت اور اپوزیشن کے مابین سخت معرکہ آرائی کا امکان
اسلام ٹائمز۔ سندھ اسمبلی کے کل بروز پیر سے شروع ہونے والے بجٹ اجلاس میں صوبائی حکومت اور اپوزیشن کے مابین سخت معرکہ آرائی کا امکان ہے، پیپلز پارٹی نے ستائیس ستمبر سے قبل صوبائی بجٹ منظور کرانے کی حکمت عملی تیار کرلی ہے، جبکہ اپوزیشن جماعتوں نے پیپلز پارٹی کی سندھ حکومت کو بجٹ کی منظوری کے موقع پر ٹف ٹائم دینے کیلئے مشترکہ لائحہ عمل کی تیاری شروع کر دی ہے۔ سندھ اسمبلی میں متحدہ اپوزیشن میں شامل جماعتوں نے پیپلز پارٹی کی سندھ حکومت کے گزشتہ دس سالہ دورِ اقتدار میں سرکاری فنڈز کے بے جا استعمال، کرپشن اور اقربا پروری کے کیسز کا ایوان میں پردہ چاک کرنے کیلئے اپنی حکمت عملی تیار کرنے کیلئے کل بروز پیر اجلاس طلب کرلیا ہے،جس میں سندھ حکومت کی جانب سے ایوان میں منظوری کیلئے پیش کیے جانے والے مطالبات زر کی منظوری کے موقع پر صوبائی حکومت کو آئینہ دکھانے کیلئے لائحہ عمل تیار کیا جائے گا۔

بجٹ اجلاس کے موقع پر سندھ حکومت کو ٹف ٹائم دینے کیلئے سب سے زیادہ متحرک تحریک انصاف کے ارکان سندھ اسمبلی ہیں، وہ سندھ کے تمام اضلاع میں دستیاب بنیادی سہولتوں، صحت و صفائی کی صورتحال کے علاوہ تعلیمی اداروں اور اسپتالوں کی حالت زار پر سندھ اسمبلی میں آواز بلند کریں گے، پی ٹی آئی ارکان اسمبلی نے اندرون سندھ عوام کو درپیش مسائل اور صحت و صفائی کی ناگفتہ بہ صورتحال کی تصاویر اور ویڈیو کلپس بھی تیار کیے ہیں، تاکہ انہیں بطور ثبوت سندھ اسمبلی کے ایوان میں پیش کیا جائے۔ سندھ اسمبلی میں پیپلز پارٹی کو واضح عددی اکثریت حاصل ہے، مگر اس کے باوجود اپوزیشن پارٹیوں نے سندھ میں گزشتہ دس سال کے دوران ہونے والی کرپشن، سرکاری وسائل کے غلط استعمال اور اقربا پروری جیسے حکومتی اقدامات پر خاموش نہ رہنے اور بھرپور آواز بلند کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔
خبر کا کوڈ : 751730
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش