0
Wednesday 10 Oct 2018 18:34

لاہور، جمیعت پنجاب یونیورسٹی کے کارکنوں کا طالبعلم پر تشدد، کپڑے پھاڑ ڈالے

لاہور، جمیعت پنجاب یونیورسٹی کے کارکنوں کا طالبعلم پر تشدد، کپڑے پھاڑ ڈالے
اسلام ٹائمز۔ پنجاب یونیورسٹی لاہور کی انتظامیہ تو تبدیل ہو گئی مگر قابض اسلامی جمعیت طلباء کا رویہ تبدیل نہیں ہوا۔ پنجاب یونیورسٹی کے ہیلے کالج میں اسلامی جمیعت طلباء کے کارکنوں نے طالبعلم ذیشان احمد بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔ ذیشان احمد کے مطابق اسے اسلامی جعمیت طلبہ پنجاب یونیورسٹی کے ناظم ذیشان اشرف رانجھا، علی وٹو اور ان کے دیگر 3 ساتھیوں نے اسے تشدد کا نشانہ بنایا۔ ذیشان کے مطابق تشدد کے دوران ملزمان نے اس کے کپڑے بھی پھاڑ دیئے۔ تشدد کرنے کے بعد جمعیت کے کارکن موقع سے فرار ہو گئے۔ ذیشان احمد شکایت لے کر وائس چانسلر آفس پہنچے مگر وائس چانسلر نے ملنے سے کی اجازت نہ دی جس پر ذیشان احمد نے اسلامی جمیعت کے کارکنوں کیخلاف پنجاب یونیورسٹی کے چیف سکیورٹی افسر کو درخواست دیدی ہے۔ متاثرہ طالبعلم نے مطالبہ کیا ہے کہ جمیعت کے کارکنوں کیخلاف کارروائی عمل میں لائی جائے۔ ذیشان کے مطابق جمیعت نے یونیورسٹی کو جاگیر سمجھ رکھا ہے اور آئے روز طلباء کو تشدد کا نشانہ بناتے رہتے ہیں۔
خبر کا کوڈ : 755063
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش