0
Friday 21 Dec 2018 17:05

کوئٹہ ڈی ایچ اے کی تعمیر دور حاضر کے تقاضوں کے عین مطابق کی جائیگی، بریگیڈیئر محمد جاوید اقبال

کوئٹہ ڈی ایچ اے کی تعمیر دور حاضر کے تقاضوں کے عین مطابق کی جائیگی، بریگیڈیئر محمد جاوید اقبال
اسلام ٹائمز۔ ڈی ایچ اے کوئٹہ کے ایڈمنسٹریٹر بریگیڈیئر محمد جاوید اقبال نے کہا ہے کہ کوئٹہ ڈی ایچ اے کی تعمیر دور حاضر کے تقاضوں کے عین مطابق کی جائے گی، جس میں عوام کو رہائشی، صحت، تعلیم سمیت تمام تر سہولیات کی فراہمی ممکن بنائی جائے گی، یہاں زندگی کے ہر شعبے سے تعلق رکھنے والوں کو رہائشی، تعلیمی، کاروباری و دیگر مواقع میسر آئیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ایوان صنعت و تجارت کوئٹہ کے عہدیداران، ممبران اور بزنس کمیونٹی کے افراد کو ڈی ایچ اے سے متعلق بریفنگ دیتے ہوئے کیا۔ اس سے قبل چیمبر آف کامرس کے پیٹرن ان چیف غلام فاروق خلجی، صدر جمعہ خان بادیزئی، سنیئر نائب صدر صلاح الدین خلجی، نائب صدر یٰسین رئیسانی و دیگر نے ان کا چیمبر آف کامرس آنے پر استقبال کیا۔ چیمبر آف کامرس کے پیٹرن ان چیف غلام فاروق خلجی کا کہنا تھا کہ چیمبر آف کامرس کی سنگ بنیاد 1971ء میں رکھی گئی، اب اس کے ممبران کی تعداد 4 ہزار سے زائد ہے جو ملک کے اندر اور ہمسائیہ ممالک کے ساتھ کاروبار کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہیں، گذشتہ سال چیمبر آف کامرس کے ممبران اور بزنس کمیونٹی نے کسٹم کلکٹریٹ کو لیگل ٹریڈ کے لئے 20 ارب روپے سے زائد کے ٹیکسز ادا کئے۔ انہوں نے کہا کہ عرصہ دراز سے صوبائی دارالحکومت کوئٹہ میں ایک ایسی ہاؤسنگ اسکیم کی ضرورت محسوس کی جا رہی تھی، جس میں عوام کو رہائش سمیت دیگر سہولیات میسر ہوں، ڈی ایچ اے کے اعلان کے ساتھ ہی صنعت و تجارت سے وابستہ افراد و دیگر کی اس میں دلچسپی بڑھی ہے۔

اس موقع پر ڈی ایچ اے کے ایڈمنسٹریٹر بریگیڈیئر محمد جاوید اقبال نے بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ ہم "آپ کی خواہش ہمارا مطمعہ نظر" کے موٹو کے تحت کام کررہے ہیں، ہم کوئٹہ میں ایک ایسی ڈی ایچ اے ہاؤسنگ بنانا چاہتے ہیں، جس میں عوام کو رہائش، تعلیم، صحت سمیت تمام تر سہولیات میسر ہوں، ہمارا مقصد اربن کمیونٹی ڈویلپمنٹ کے ساتھ عوام کو ایجوکیشن، ہیلتھ، سپورٹس سہولیات دینا ہے، بلکہ واٹر ریسورس منیجمنٹ سسٹم و دیگر بھی بنائے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ڈی ایچ اے کوئٹہ میں تفریح کے لئے گیمنگ زون ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کے پروجیکٹس کی کامیابی کیلئے سب کو اجتماعی کوششیں کرنا پڑتی ہیں، کیونکہ یہ فرد واحد کے بس کی بات نہیں۔ انہوں نے کہا کہ نہ صرف سیلری کلاس کیلئے اس میں شراکت داری کی کوششیں کی جا رہی ہیں، بلکہ اس سے ان لوگوں کی بھی فلاح ہو گی کہ جو پیشے کے دوران مختلف مسائل سے دوچار رہتے ہیں، اس میں سوشل اور کلچرل روایات کا بھی خاص خیال رکھا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کے پروجیکٹس کا اقتصادیات کے ساتھ گہرا تعلق ہے، یہ منصوبہ ایک بنیاد ہے اس طرز کے منصوبوں کی مستقبل میں بلوچستان کے دیگر شعبوں میں بھی کامیابی کیلئے کوششیں کی جائیں گی۔ انہوں نے کہا کوئٹہ ملک کا واحد بڑا شہر ہے جو سی پیک منصوبے کے بڑے روٹ پر واقع ہے اور یہ ایک ایونیو کی مانند ہے۔ انہوں نے کہا کہ ڈی ایچ اے کوئٹہ میں تعلیم، صحت، پینے کے صاف پانی اور زندگی کے دیگر ضروریات کے لئے پانی کی ری سائکلنگ کے منصوبوں سمیت ماحول کا بھی خاص خیال رکھا جائے گا تاکہ کلائمٹ چینج و دیگر چیلنجز سے نمٹا جا سکیں۔ انہوں نے کہا کہ فیز ون کی کامیابی کے بعد دو سے فیز پر غور کیا جائے گا، فیز ون میں 5 سے دس مرلے کے مکانات سمیت چھوٹے پلاٹس بھی ہوں گے۔ اس موقع پر چیمبر آف کامرس کے صدر جمعہ خان بادیزئی، سنئیر نائب صدر صلاح الدین خلجی موجود تھے۔
خبر کا کوڈ : 767878
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب