0
Thursday 7 Feb 2019 18:54

کراچی، تجاوزات کیخلاف آپریشن وبال جان بن گیا، ڈھائی ماہ بعد بھی ملبہ اٹھانے اور بحالی کا کام شروع نہ ہوسکا

کراچی، تجاوزات کیخلاف آپریشن وبال جان بن گیا، ڈھائی ماہ بعد بھی ملبہ اٹھانے اور بحالی کا کام شروع نہ ہوسکا
اسلام ٹائمز۔ کراچی میں بغیر منصوبہ بندی تجاوزات کیخلاف آپریشن وبال جان بن گیا، ڈھائی ماہ بعد بھی ملبہ اٹھانے اور بحالی کا کام شروع نہ ہوسکا۔ کراچی میں پہلے تجاوزات نے ناک میں دم کر رکھا تھا اب ملبے کے پہاڑ شہریوں کی پریشانی کا سبب بنے ہوئے ہیں، جس سے ناصرف ٹریفک کی روانی متاثر ہو رہی ہے بلکہ جابجا گندگی کے ڈھیر بھی لگ گئے ہیں۔ ملبہ سڑکوں پر پھیل رہا ہے جبکہ دھول کے باعث سانس لینا بھی محال ہو چکا ہے۔ غیر قانونی تعمیرات کا خاتمہ تو کیا گیا لیکن ملبہ اٹھا نہ بحالی کا کام شروع ہوا، توڑ پھوڑ پہلے کی گئی اور سندھ سرکار سے گرانٹ کا مطالبہ بعد میں کیا گیا۔ ڈھائی ماہ بعد وزیراعلیٰ سندھ نے 20 کروڑ روپے کی گرانٹ کی منظوری دی۔ کے ایم سی حکام کے مطابق رقم موصول ہوتے ہی فٹ پاتھ بھی بنیں گے اور سڑکیں بھی۔ آپریشن کی زد میں آنے والے یا سڑکوں سے گزرنے والے سب کا کہنا تھا کہ متبادل جگہوں کی فراہمی اور بحالی کے کام کی منصوبہ بندی آپریشن سے قبل کرنی چاہیئے تھی، سندھ حکومت کی جانب سے 20 کروڑ روپے کی گرانٹ کی منظوری کے بعد قوی امید ہے کہ جلد آپریشن زدہ علاقوں کی حالت میں بہتری نظر آئے گی۔
خبر کا کوڈ : 776729
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب