0
Saturday 9 Mar 2019 08:59

لاہور، پنجاب یونیورسٹی میں قتل کی لرزہ خیز واردات، خوف وہراس پھیل گیا

لاہور، پنجاب یونیورسٹی میں قتل کی لرزہ خیز واردات، خوف وہراس پھیل گیا
اسلام ٹائمز۔ پنجاب یونیورسٹی میں قتل کی لرزہ خیز واردات، طلباء میں خوف و ہراس پھیل گیا۔ نامعلوم افراد یونیورسٹی کے ہاسٹل نمبر ایک کے درزی محمد سہیل کو ہاسٹل ایریا میں قتل کرکے فرار ہوگئے۔ رات گئے پنجاب یونیورسٹی کے بوائز ہاسٹل نمبر1 میں روڈ پر قتل کی لرزہ خیز واردات میں نامعلوم افراد نے محمد سہیل نامی نوجوان کو قتل کر دیا۔ مقتول سہیل کا تعلق حجرہ شاہ مقیم سے تھا، جو ہاسٹل میں بطور درزی کام کرتا تھا۔ رجسٹرار پنجاب یونیورسٹی خالد خان کا کہنا تھا کہ یہ نوجوان یہاں درزی کے ہاں ملازم تھا۔ کیس پولیس کے حوالے کر دیا گیا ہے، پولیس تحقیقات کر رہی ہے، انتظامیہ اس  معاملے میں ہر طرح سے تعاون کرے گی۔

دوسری جانب طلباء نے پنجاب یونیورسٹی کی سکیورٹی پر سوالیہ نشان اٹھا دیئے ہیں۔ طلباء کا کہنا ہے کہ اس طرح سے طلباء بھی یونیورسٹی میں محفوظ نہیں۔ یونیورسٹی سکیورٹی کے افراد بھی موقع پر تاخیر سے پہنچے۔ ادھر پولیس نے لاش پوسٹمارٹم کیلئے جناح ہسپتال کے مردہ خانے منتقل کر دی ہے، جبکہ مقتول کے بہنوئی اللہ دتہ کی مدعیت میں مقدمہ درج کرکے قاتلوں کی تلاش شروع کر دی گئی ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ بہت جلد ہی قاتلوں تک پہنچ جائیں گے۔
خبر کا کوڈ : 782179
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب