0
Saturday 23 Mar 2019 03:57

ایم ڈبلیو ایم نے مفتی تقی عثمانی پر قاتلانہ حملے کو ملک دشمن قوتوں کی سازش قرار دیدیا

ایم ڈبلیو ایم نے مفتی تقی عثمانی پر قاتلانہ حملے کو ملک دشمن قوتوں کی سازش قرار دیدیا
اسلام ٹائمز۔ مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری اور ڈپٹی سیکرٹری جنرل علامہ احمد اقبال رضوی نے میڈیا سیل سے جاری اپنے مشترکہ بیان میں معروف عالم دین مفتی تقی عثمانی پر قاتلانہ حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے اس کارروائی کو ملک دشمن قوتوں کی سازش قرار دیا ہے۔ ایم ڈبلیو ایم قائدین نے کہا کہ کل 23 مارچ یوم پاکستان ہے، پاکستان دشمن قوتیں جو ملک کو پرامن اور مستحکم دیکھنا نہیں چاہتی ہیں، وہی اس بزدلانہ کارروائی میں ملوث ہیں، چند روز قبل دشمن قوتوں نے مادر وطن پر جارحیت کے ذریعے جنگ مسلط کرنے کی کوشش کی، جسے پاکستان کے غیور عوام اور مسلح افواج بشمول محب وطن سیاسی و مذہبی قوتوں نے اپنے اتحاد سے ناکام بنا دیا تھا، اپنی شکست اور ہزیمت کا بدلہ لینے کے لئے بھارت ہمیں داخلی طور پر دہشت گرد کارروائیوں اور نسلی، لسانی اور مذہبی منافرت کے ذریعے خلفشار پھیلا کر کمزور کرنے کی کوشش کر رہا ہے، جسے ان شاءاللہ ہماری سیاسی و مذہبی قیادت اور باشعور عوام کسی صورت کامیاب نہیں ہونے دیں گے، اب پاکستانی عوام سمجھ چکی ہے کہ مادر وطن میں کسی قسم کی منافرت کی کوئی گنجائش نہیں ہے۔

ایم ڈبلیو ایم قائدین نے کہا کہ پوری پاکستانی قوم اس دہشتگردانہ واقعہ کی مذمت کرتی ہے اور دشمن کے مقابل سیسہ پلائی دیوار کی مانند کھڑی ہے، ہم مجلس وحدت مسلمین کی جانب سے اس دہشتگردانہ واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں، واقعہ میں جاں بحق افراد کے اہلخانہ کے غم میں برابر کے شریک اور ان سے اظہار تعزیت کرتے ہیں، دعاگو ہیں کہ اللہ تعالٰی پاکستان کی حفاظت فرمائے اور ملک دشمنوں کو واصل جہنم کرے۔ دریں اثناء مجلس وحدت مسلمین کے دیگر رہنماوں علامہ مختار امامی،، علامہ مقصود علی ڈومکی، علی حسین نقوی، علامہ صادق جعفری، علامہ علی انور جعفری، علامہ مبشر حسن، میر تقی ظفر، ناصر حسینی سمیت دیگر رہنماؤں نے واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کی اور دہشتگردوں کی جلد از جلد گرفتاری کا مطالبہ کیا ہے۔
خبر کا کوڈ : 784703
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے