0
Tuesday 9 Apr 2019 11:16

بھارت اور اسرائیل انتخابات میں کامیابی کیلئے کسی بھی حد تک جا سکتے ہیں، عمران خان

بھارت اور اسرائیل انتخابات میں کامیابی کیلئے کسی بھی حد تک جا سکتے ہیں، عمران خان
اسلام ٹائمز۔ وزیراعظم عمران خان نے بھارت اور اسرائیل کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ ووٹ لینے کے لیے دونوں ملکوں کی قیادت اپنے عوام کو گمراہ کر رہی ہے۔ وزیراعظم نے منگل کو سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر بھارتی اور اسرائیلی قیادت کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ دونوں ملکوں کی قیادت الیکشن میں فتح کے لیے اپنے عوام کو گمراہ کر رہے ہیں۔ یاد رہے کہ اسرائیل میں آج انتخابات ہیں جبکہ بھارت میں 11 اپریل سے انتخابی عمل شروع ہونے والا ہے اور دونوں ہی ملکوں کی حکومتوں کی جانب سے الیکشن میں کامیابی کے جارحیت کا استمال کیا جا رہا ہے۔ وزیراعظم نے اپنے پیغام میں کہا کہ جب بھارت و اسرائیل میں رہنما محض ووٹوں کے لیے اخلاقی دیوالیہ پن میں کمشیر/مغربی پٹی پر عالمی قوانین، سلامتی کونسل کی قراردادوں اور اپنے آئین کے برعکس قبضہ جمائے رکھنے کا نعرہ لگاتے ہیں تو کیا عوام کو غصہ نہیں آتا اور وہ ان سے پوچھتے نہیں کہ انتخاب جیتنے کیلئے آخر کس حد تک جاؤ گے۔؟

دیگر ذرائع کے مطابق عمران خان کا کہنا ہے کہ بھارت اور اسرائیل کی موجودہ قیادت انتخابات میں کامیابی کے لئے اپنے عوام کو گمراہ کر رہی ہے، بھارت مقبوضہ کشمیر جبکہ اسرائیل فلسطین میں عالمی قوانین کا مذاق اڑا رہا ہے۔ وزیراعظم عمران خان کی جانب سے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ بھارت اور اسرائیل کے انتخابات میں کامیابی کیلئے دونوں ممالک کی قیادت اپنے عوام کو گمراہ کر رہی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ بھارتی قیادت مقبوضہ کشمیر میں نہتے عوام پر مظالم اور انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیاں کرکے عالمی قوانین کامذاق اڑا رہی ہے جبکہ اسرائیل کے فلسطین میں مظالم سلامتی کونسل کی قراردادوں کا منہ چڑھا رہے ہیں۔ عمران خان نے کہا کہ بھارت اور اسرائیل کے رہنما ووٹ حاصل کرنے کیلئے عالمی قوانین اور اپنے آئین کو توڑتے ہیں، وہاں کے عوام اخلاقی دیوالیہ قیادت کیخلاف اٹھتے کیوں نہیں۔؟ عوام یہ نہیں سوچتے کہ الیکشن جیتنے کیلئے ان کے لیڈر کیا کیا کر رہے ہیں۔ یاد رہے بھارت کی حکمران جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے اگلے عام انتخابات کے لیے اپنے منشور میں روایتی انتہا پسندی کی پالیسی کو برقرار رکھتے ہوئے کشمیریوں کے خصوصی حقوق ختم کرنے اور بابری مسجد کی جگہ رام مندر تعمیر کرنے کا اعلان کیا ہے۔
خبر کا کوڈ : 787703
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب