0
Sunday 21 Apr 2019 21:56

حکومت نے پیپلز پارٹی کے 6 وزراء لئے، وزیراعظم بھی ہمارا لے لیں، مولا بخش چانڈیو

حکومت نے پیپلز پارٹی کے 6 وزراء لئے، وزیراعظم بھی ہمارا لے لیں، مولا بخش چانڈیو
اسلام ٹائمز۔ پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما سینیٹر مولا بخش چانڈیو نے حکومت پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ موجودہ حکومت نے پیپلز پارٹی کے 6 وزراء لئے ہیں، وزیراعظم بھی ہمارا لے لیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کی کشتی میں سوراخ ہوچکا ہے، آہستہ آہستہ پوری حکومت کا حلیہ ہی تبدیل ہوجائے گا، مسائل کے حل کے لئے صرف وزیرخزانہ نہیں وزیراعظم بھی پیپلز پارٹی کا لانا ہوگا۔ حیدرآباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ وزیراعظم مایوس ہوگئے ہیں وہ اپنی ٹیم سے دلبرداشتہ ہوگئے ہیں اور واپسی کا راستہ تلاش کررہے ہیں، پی ٹی آئی کا پورا حلیہ تبدیل ہوجائے گا، مزید تبدیلی آئے گی، اب فردوس عاشق اعوان آئی ہیں وہ بھی پیپلز پارٹی کی وزیر رہ چکی ہیں، یقین ہے موجودہ وزیر اطلاعات سابق وزیر اطلاعات والی زبان استعمال نہیں کریں گی۔ رہنما پیپلز پارٹی نے عمران خان کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ 'آپ نے کہا کہ جو کام نہیں کرے گا وہ گھر جائے گا، مطلب جو گھر بھیجے گئے وہ کام نہیں کرتے تھے، لوگوں کی پگڑیاں اچھالنے والے وزیر اطلاعات بھی گھر چلے گئے، وزراء مستعفی ہوئے ہیں تو وزیراعظم کو بھی استعفیٰ دینا چاہیئے۔

مولابخش چانڈیو نے مزید کہا کہ کسی بھی صورت اور شکل میں صدارتی نظام برداشت نہیں کیا جائے گا، وزیراعظم بننا شاہ محمود قریشی کی خواہش ہے، کوشش کرنا جرم نہیں، حکومت خود اپنے خلاف تحریک کا آغاز کرچکی ہے، میں جہانگیر ترین اور شاہ محمود قریشی کی لڑائی کو معمولی نہیں سمجھتا۔ انہوں نے کہا کہ قومی حکومت کے قیام کیلئے وزیراعظم کا تبدیل ہونا ضروری ہے، اگرقومی حکومت بن رہی ہے تو الوداع عمران خان۔ مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ آپ آئی ایم ایف کی فرمائش پر ملک کو تباہ کرنا چاہتے ہیں، حکومت سے متعلق ہماری ساری باتیں درست ہورہی ہیں، بغیر ثبوت کے الزامات لگائے جارہے ہیں، یہ لوگ کہتے ہیں این آر او نہیں دیں گے، آپ سے این آر او مانگا کس نے ہے۔
خبر کا کوڈ : 789850
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب