0
Monday 13 May 2019 22:33

پارلیمنٹ کو نظر انداز کرکے آئی ایم ایف سے ڈیل کو مسترد کرتے ہیں، نفیسہ شاہ

پارلیمنٹ کو نظر انداز کرکے آئی ایم ایف سے ڈیل کو مسترد کرتے ہیں، نفیسہ شاہ
اسلام ٹائمز۔ پیپلز پارٹی کی سیکریٹری اطلاعات نفیشہ شاہ کا اپنے ردعمل میں کہنا تھا کہ پارلیمنٹ کو نظر انداز کرکے آئی ایم ایف سے ڈیل کو مسترد کرتے ہیں، حکومت کو پارلیمنٹ آکر آئی ایم ایف سے ڈیل کی شرائط بتانا ہوں گی۔ ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ عوام کو اندھیرے میں رکھ کر آئی ایم ایف سے بالا ہی بالا ڈیل کرلی گئی، وزارت خزانہ کے اہم افسران کو بھی آئی ایم ایف مذاکرات سے لاتعلق رکھا گیا، اہم ریاستی اداروں پر آئی ایم ایف کے تنخواہ دار مسلط کردیئے گئے۔ ان کا کہنا ہے کہ اقساط میں 6 ارب ڈالر سے بجٹ اور کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ کیسے پورا ہوگا؟ قرضہ لینے پر خودکشی کو ترجیح دینے والوں کے لئے آئی ایم ایف سے ڈیل شرمناک ہے، جب آئی ایم ایف سے ڈیل ناگزیر تھی تو 9 ماہ تک خزانے کو نقصان پہنچانے کا ذمہ دار کون؟ نفیسہ شاہ کا کہنا تھا کہ تبدیلی کا سونامی لانے والے مہنگائی کا سونامی لاچکے ہیں، پاکستان میں پی ٹی آئی ایم ایف کی حکومت ہے، جس کا سربراہ آئی ایم ایف خان ہے۔

نفیسہ شاہ نے کہا کہ آئی ایم ایف سے ڈیل کے باوجود پی پی نے تنخواہوں اور پنشن میں اضافہ کیا لیکن کمزور اور نااہل حکومت نے آئی ایم ایف کے آگے گھٹنے ٹیک دیئے اور اب حکومت اب سینکڑوں ارب روپے کے ٹیکس لگانے کی تیاری کررہی ہے۔ یاد رہے کہ پاکستان اور عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) سے معاہدہ ہوگیا ہے اور پاکستان کو تین سال کے دوران آئی ایم ایف سے 6 ارب ڈالر ملیں گے۔ پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان معاہدے کا اعلان وزیراعظم عمران خان کے مشیر برائے خزانہ عبد الحفیظ شیخ نے کیا۔
خبر کا کوڈ : 794046
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب