0
Thursday 16 May 2019 21:38

مسلم لیگ(ن) صرف شیطانی کر رہی ہے، وہ کبھی بھی سرائیکی خطے سے اپنا قبضہ ختم نہیں کرنا چاہتی، سرائیکی وکلاء رہنما

مسلم لیگ(ن) صرف شیطانی کر رہی ہے، وہ کبھی بھی سرائیکی خطے سے اپنا قبضہ ختم نہیں کرنا چاہتی، سرائیکی وکلاء رہنما
اسلام ٹائمز۔ علیحدہ سرائیکی صوبہ کے خلاف نواز لیگ اور طارق بشیر چیمہ کی طرف سے بار بار سازش کرنے کے خلاف سرائیکستان نوجوان تحریک لائرونگ کے زیراہتمام کچہری چوک ملتان میں بھرپور احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ ایس این ٹی لائرونگ کے عہدیداران نے ڈی سی او آفس کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے مسلم لیگ (ن) مردہ باد، وسیب دشمن مردہ باد، طارق بشیر مردہ باد کے نعرے لگائے اور نئے صوبے میں جھنگ، بھکر، میانوالی، ڈیرہ اسماعیل خان کو شامل کرو، سرائیکی خطے کے مرکز ملتان کو دارالخلافہ بنائو کے نعرے لگائے۔ مظاہرین نے بینرز اٹھا رکھے تھے، جن پر مسلم لیگ (ن) کی شیطانی چال نامنظور اور بہاولپور نہ ملتان صوبہ صرف سرائیکستان کے نعرے درج تھے۔ مظاہرے کی قیادت ایس این ٹی لائرونگ کے مرکزی صدر و ہائیکورٹ بار ملتان کے نائب صدر ساجد ایزدی سنپال ایڈووکیٹ، ڈویژنل صدر ملک اشفاق کھوکھر، ضلعی صدر شاہد خان بلوچ، جاوید اقبال اوجلہ، سید محسن ثقلین کاظمی ایڈووکیٹس ہائیکورٹ نے کی۔

اس موقع پر مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے ساجد ایزدی سنپال، ملک اشفاق کھوکھر اور شاہد خان بلوچ نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) ہمارے سرائیکی خطے کی ازلی دشمن اور منافق جماعت ہے، اس نے ہمیشہ ہمارے وسائل لوٹے ہیں اور ہمارے خطے پر قبضہ کیا ہے، انہوں نے کہا کہ نواز لیگ صرف شیطانی تماشا کر رہی ہے اور وہ کبھی بھی سرائیکی خطے سے اپنا قبضہ ختم نہیں کرنا چاہتی، اسی لیے دو صوبوں کی بات کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا نواز لیگ کے پاس دو تہائی اکثریت تھی، اس وقت اس منافق جماعت نے دو صوبے کیوں نہیں بنائے؟، انہوں نے کہا سرائیکی خطے کے لوگ اس ازلی دشمن جماعت کا مکمل بائیکاٹ کریں۔

انہوں نے طارق بشیر چیمہ کو تخت لاہور کا پٹھو اور سرائیکی خطے پر قبضہ گیر قرار دیتے ہوئے اس کے بہاولپور صوبہ کے نعرے کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ اس کا باپ بہاولپور صوبے کا سب سے بڑا دشمن تھا، مگر یہ حامی بن گیا ہے، صرف اپنا قبضہ برقرار رکھنے اور چولستان کی زمینوں پر قبضہ کرنے کے لیے جو ہم کسی صورت نہیں ہونے دیں گے۔ انہوں نے کہا ہم پی ٹی آئی اور خاص کر شاہ محمود قریشی کو باور کروانا چاہتے ہیں کہ ہمیں صرف تین ڈویژنوں کا نہیں بلکہ ملتان سے ملحقہ اضلاع جھنگ، بھکر، میانوالی، خوشاب، ٹانک، ڈیرہ اسماعیل خان سمیت علیحدہ صوبہ چاہتے ہیں، اسکے لیے اپنی جدوجہد جار رکھیں گے، انہوں نے کہا کہ سرائیکی خطے کا قدیمی اور مرکزی شہر ملتان ہے، لہذا حکومت ہوش کے ناخن لیتے ہوئے ملتان کو ہی نئے صوبے کا دارالخلافہ بنائے، نہیں تو پورے سرائیکی وسیب میں شدید احتجاج کریں گے۔
خبر کا کوڈ : 794672
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب