0
Friday 31 May 2019 21:53
اسلام آباد میں شیعہ سنی تنظیموں کی مشترکہ القدس ریلی

فلسطین اور فلسطینیوں کیخلاف کسی سازش کو قبول نہیں کریں گے، مقررین کا خطاب

امریکی ڈیل آف سینچری کے منصوبے کو مسترد کرتے ہیں
فلسطین اور فلسطینیوں کیخلاف کسی سازش کو قبول نہیں کریں گے، مقررین کا خطاب
اسلام ٹائمز۔ مجلس وحدت مسلمین اور امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کی جانب سے قبلہ اوّل بیت المقدس اور ارض مقدس فلسطین کی صیہونی قبضہ سے آزادی اور امریکی ایما پہ مسلط کی جانیوالی “صدی کی ڈیل“ کیخلاف جمعتہ الوادع کو ملک بھر میں یوم القدس کے طور پہ منایا گیا۔ اسلام آباد میں مرکزی ریلی امام بارگاہ جی سکس ٹو سے نکالی گئی جو ڈی چوک پر پہنچ کر اختتام پذیر ہوئی، ملی یکجہتی کونسل میں شامل جماعتوں کے رہنماوں نے بھی ریلی میں شرکت کی اور خطاب کیا۔ ریلی سے خطاب کرتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی سکریٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے کہا ہے کہ قبلہ اوّل بیت المقدس کی صیہونی قبضہ و تسلط سے آزادی ہمارے ایمان کا حصہ ہے، پاکستان کی غیور عوام امریکہ اور عرب ریاستوں کی قبلہ اوّل کو مسلمانوں سے چھیننے اور آزاد فلسطینی ریاست کے وجود کے خلاف کسی سازش کو قبول نہیں کریںگے۔ انہوں نے کہا کہ نئے مشرق وسطی کی طرح امریکیوں اور انکے عرب اتحادی شیوخ کا “صدی کی ڈیل کا منصوبہ بھی خاک میں مل جائے گا۔ ارض مقدس فلسطین پہ فلسطینوں کا حق ہے اور کسی بھی خائن کو یہ حق حاصل نہیں کہ اسکا سودا کرسکے۔

 القدس ریلی کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے مرکزی سیکرٹری جنرل امامیہ اسٹوڈینٹس آرگنائزیشن عارف حسین نے کہا کہ مسلم ممالک کے خلاف اتحاد بنانے کی بجائے مسلم حکمرانوں کو صیہونی مظالم کے خلاف اور قبلہ اول کی آزادی کے لئے متحد ہونے کی ضرورت ہے۔ استعماری قوتیں زندگی کے ہر میدان میں عالم اسلام کو پسپا کرنے پر تلی ہوئی ہیں۔ فلسطین کے مکینوں کو ان کی املاک سے بےدخل کرکے مہاجر بنایا جا رہا ہے جبکہ باہر سے آکر آباد ہونے والے یہودی اس مسلم ریاست پر قابض ہوگئے ہیں۔ اس مسلم ریاست کو یہودی تسلط سے چھڑانا امت مسلمہ کا اولین فریضہ ہے۔ انہوں نے صیہونی مظالم پر شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے بیت المقدس کی آزادی کے لئے امت مسلمہ کی مشترکہ جدوجہد کا مطالبہ کیا۔

شیعہ علما کونسل کے مرکزی سیکرٹری جنرل عارف واحدی نے ریلی کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسرائیل نے فلسطین کے مسلمانوں پر عرصہ حیات تنگ کر رکھا ہے، لیکن مسلمان ممالک اسرائیل کے اس جارحانہ طرز عمل کے خلاف کسی غیر معمولی ردعمل کا اظہار کرنے کی بجائے اس کے ساتھ کاروباری رابطے استوار کرنے میں مصروف ہیں جو نہ صرف اخلاقی تنزلی ہے بلکہ حکم ربانی سے بھی صریحاََ انحراف ہے۔ اسرائیل کی بجائے مسلمان ممالک کے خلاف عرب ممالک کا اتحاد ان کی ترحیجات اور اہداف کو سمجھنے کے لئے کافی ہے۔ ملی یکجہتی کونسل کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل ثاقب اکبر نے کہا کہ قبلہ اول پر اسرائیل کا غاصبانہ قبضہ امت مسلمہ کی قوت ایمانی پر کاری ضرب ہے۔ عالم اسلام کو اپنے مقدسات کی حفاظت کو مقدم رکھنا چاہیے۔ اس وقت عالم اسلام استعماری قوتوں کے نشانے پر ہے۔ یہود و نصاریٰ کے مفادات اور اہداف مشترک ہیں۔ تاریخ کے اس نازک دور میں مسلمان حکمرانوں کو اعلٰی بصیرت اور دور اندیشی کا مظاہرہ کرنے کی ضرورت ہے۔

شرکائے ریلی سے خطاب کرتے ہوئے جماعت اسلامی کے نائب امیر میاں اسلم نے کہا کہ امام خمینی رضوان اللہ تعالیٰ کے حکم کے مطابق یوم القدس مظلوموں کی حمایت کا عالمی دن ہے۔ دنیا کا ہر ذی شعور جو ظلم کو انسانی تقاضوں کی توہین سمجھتا ہے، وہ اس دن کی حمایت میں آواز بلند کرتا ہے۔
خبر کا کوڈ : 797294
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب