0
Thursday 13 Jun 2019 15:09

پشاور ہائیکورٹ نے خیبر پختونخوا کے مشیروں کی تعیناتی معطل کر دی

پشاور ہائیکورٹ نے خیبر پختونخوا کے مشیروں کی تعیناتی معطل کر دی
اسلام ٹائمز۔ پشاور ہائی کورٹ نے خیبر پختونخوا کے صوبائی معاونین خصوصی اور مشیروں کی تعیناتی معطل کرنے کے احکامات جاری کر دیئے۔ پشاور ہائی کورٹ میں جسٹس اکرام اللہ اور جسٹس روح الامین پر مبنی 2 رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی، عدالت نے اجمل وزیر، ضیاء بنگش، عبدالکریم، حمایت اللہ اور کامران بنگش کو معطل کرنے کے احکامات جاری کر دیئے۔ واضح رہے سابق ڈپٹی اسپیکر خوشدل خان نے خیبر پختونخوا کے صوبائی معاونین خصوصی اور مشیروں کی تعیناتی کے خلاف رٹ دائر کی تھی، جس میں موقف اختیار کیا گیا تھا کہ معاونین کی تعیناتی غیر قانونی ہے، حالانکہ کابینہ مکمل ہے۔

دوسری جانب صوبائی وزیر اطلاعات شوکت یوسفزئی نے کہا کہ اس فیصلے کو چینلج کریں گے، کیونکہ آئین میں مشیروں و معاونین خصوصی کی تقرری کا اختیار حکومت کو حاصل ہے، آئین میں پانچ مشیر رکھنے کی گنجائش ہے، ہم نے تین مشیر مقرر کئے، حکومتی معاملات چلانے کے لئے مشیروں اور معاونین خصوصی کا تقرر ضروری ہوتا ہے۔ واضح رہے کہ صوبائی حکومت نے گذشتہ دنوں پانچ مشیروں و معاونین خصوصی کو صوبائی وزراء کا درجہ دینے کا نوٹیفیکیشن جاری کیا تھا، جسے قانونی مسائل کی وجہ سے جلد ہی واپس لے لیا گیا تھا۔
خبر کا کوڈ : 799302
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے