0
Tuesday 18 Jun 2019 11:58

راحیل شریف کی یمن کیخلاف بنائے گئے سعودی عسکری اتحاد کی ملازمت میں توسیع

راحیل شریف کی یمن کیخلاف بنائے گئے سعودی عسکری اتحاد کی ملازمت میں توسیع
اسلام ٹائمز۔ سعودی عرب میں عسکری اتحاد کی سربراہی کرنے والے پاکستان کے سابق آرمی چیف راحیل شریف کی مدت ملازمت میں ایک سال کی توسیع کردی گئی ہے۔ راحیل شریف نے 29 نومبر 2016ء کو ریٹائر ہونے کے بعد جنوری 2017ء میں سعودی عرب میں قائم ہونے والے عسکری اتحاد کی کمان سنبھالی تھی اور اب ان کی مدت ملازمت میں 2020ء تک توسیع کردی گئی ہے۔ راحیل شریف کو سعودی عرب میں ملازمت کے لیے وزرات دفاع اور جی ایچ کیو کی جانب سے این او سی جاری کیا گیا تھا۔ سپریم کورٹ نے 15 دسمبر 2018ء کو اپنے فیصلے میں کہا تھا کہ قانون کے تحت سابق سرکاری ملازم کو صرف وفاقی حکومت ہی این او سی جاری کرسکتی ہے، اگر کابینہ نے اس معاملے پر فیصلہ نہ کیا تو ایک ماہ بعد سابق آرمی چیف کا این او سی غیرقانونی قرار پائے گا۔ بعد ازاں 18 جنوری 2019ء کو وفاقی حکومت نے جنرل ریٹائرڈ راحیل شریف کو پاکستان سے باہر ملازمت کے لیے این او سی جاری کردیا تھا۔ واضح رہے کہ یمن کیخلاف کاروائی کیلئے امریکہ کی سرپرستی میں سعودی ولی عہد محمد بن سلمان نے سعودہ شاہ کے فرمان پر انسداد دہشت گردی کے نام پر عسکری اتحاد کو تشکیل دیا۔
 
خبر کا کوڈ : 800132
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب