0
Thursday 20 Jun 2019 19:53

پشاور ہسپتالوں میں کمپیوٹر آپریٹرز، جونیئر کلرک اور سٹور کیپرز کی بھرتی پر پابندی

پشاور ہسپتالوں میں کمپیوٹر آپریٹرز، جونیئر کلرک اور سٹور کیپرز کی بھرتی پر پابندی
اسلام ٹائمز۔ خیبر پختونخوا حکومت نے طے شدہ طریقہ کار پر عملدرآمد نہ کرنے پر ہسپتالوں میں کمپیوٹر آپریٹر، جونیئر کلرکس اور سٹور کیپرز کی آسامیوں پر دوبارہ سے بھرتیاں کرنے پر پابندی عائد کردی ہے۔ ذرائع کے مطابق محکمہ صحت کیجانب سے جاری کیے گئے اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ بھرتیوں پرسے پابندی ہٹالی گئی تھی اور ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسرز اور میڈیکل سپرنٹنڈنٹس نے آسامیوں پر بھرتی شروع کی تھی، جس کیلئے محکمے نے قانون کے تحت ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ سروسز سے مشاورت کو لازمی قرار دیا تھا، تاہم اب محکمے نے نوٹ کیا ہے کہ بجٹ میں منظور شدہ آسامیوں و خالی آسامیوں کے حوالے سے ابہام پایا جاتا ہے، جس کی وجہ سے دوبارہ بھرتی پر پابندی عائد کردی گئی ہے، جس کی وجوہات کے مطابق کمپیوٹر آپریٹر کی آسامی کو گریڈ 14 سے 16 میں اپ گریڈ کرتے ہوئے مطلوبہ اہلیت پر نظرثانی کی گئی ہے، یہ آسامی ہیلتھ ڈائریکٹوریٹ کی عملداری میں ہے، جس کیلئے ہیلتھ ڈائریکٹوریٹ کمیٹی مقرر کریگا۔ ذرائع کے مطابق صوبے میں 100 جونیئر کلرکوں کو ترقی دی گئی ہے، لیکن سٹرکٹ ہیلتھ آفیسرز اور میڈیکل سپرٹنڈنٹس دیگر کیڈرز سے تعلق رکھنے والے عملے کو ان آسامیوں پر ایڈجسٹ کر رہے ہیں، جبکہ انہیں خالی آسامیوں کی صورتحال کا مکمل علم بھی نہیں ہے۔ اسی طرح تینوں آسامیوں پر بھرتیاں روک دینے کی ہدایات جاری کی گئی ہیں۔
خبر کا کوڈ : 800627
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب