0
Monday 24 Jun 2019 22:13

سندھ حکومت نے عوام کو پانی کی بوند بوند سے ترسا دیا، حافظ نعیم الرحمٰن

سندھ حکومت نے عوام کو پانی کی بوند بوند سے ترسا دیا، حافظ نعیم الرحمٰن
اسلام ٹائمز۔ جماعت اسلامی کراچی کے امیر حافظ نعیم الرحمٰن نے کہا ہے کہ کراچی کا پانی کراچی کے شہریوں کو نہیں دیا جا رہا، پانی کی چوری اور غیر منصفانہ تقسیم کے عمل نے عوام کو پانی کی بوند بوند کیلئے ترسا دیا ہے، اس مذموم عمل میں سندھ حکومت اور واٹر بورڈ کے افسران و اہلکار اور ٹینکر مافیا ملوث ہے، صوبائی حکومت اور واٹر بورڈ کراچی کے عوام کو پانی فراہم کرنے میں مکمل طور پر ناکام ہو چکے ہیں۔ اپنے بیان میں حافظ نعیم الرحمٰن نے کہا کہ کراچی کے عوام سے ووٹ لے کر اقتدار اور وزارتوں کے مزے لینے والے بھی مجرمانہ طور پر خاموش اور تماشائی بنے ہوئے ہیں، عوام کا کوئی پُرسان حال نہیں، کراچی کے عوام پانی، بجلی اور ٹرانسپورٹ سمیت دیگر بے شمار مسائل کا شکار ہیں اور ملک کو سب سے زیادہ ریونیو دینے والے اور صوبے کے دارالخلافہ کو صوبائی اور وفاقی حکومتیں نے لاوارث سمجھ رکھا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی نے ”کراچی کو عزت دو، حق دو“ کی تحریک کا آغاز کر دیا ہے۔

حافظ نعیم الرحمٰن نے کہا کہ کراچی کو اس کے حقوق و اختیارات کی فراہمی، بے شمار شہری مسائل کے حل اور بڑھتی ہوئی مہنگائی اور آئی ایم ایف کی غلامی کے خلاف اتوار 30 جون کو سہراب گوٹھ تا مزار قائد ایک زبردست ”کراچی عوام مارچ“ منعقد کیا جا رہا ہے، جس میں عوام کے احساسات و جذبات کی ترجمانی کی جائے گی اور یہ شہر کے عوام کا ترجمان ثابت ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ سخت گرمی کے موسم میں شہر کے بیشتر علاقوں میں پانی کی شدید قلت سے واٹر بورڈ کے عملے اور افسران نے ٹینکرز مافیا کی ملی بھگت سے شہریوں کو پانی سے محروم کر رکھا ہے اور بعض اطلاعات کے مطابق رہائشی علاقوں کا پانی انڈسٹریل ایریا میں فراہم کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کراچی کے پانی کے کوٹے میں اضافہ کیا جانا چاہیئے اور پانی کی فراہمی کے ایک بڑے منصوبے K-4 کو جلد از جلد مکمل کرنے کیلئے وفاقی اور صوبائی حکومتوں کو اپنا آئینی کردار اور فرض ادا کرنا چاہیئے۔
خبر کا کوڈ : 801303
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب